مودی حکومت کے بجٹ کی چھپائی شروع، جانیں کیوں اگلے 11 دن گھر نہیں جا سکتے ہیں یہ 100 افسران

پیر کو معاشی امور کے وزرائے مملکت شیو پرتاپ شکلا اور پان رادھا کرشنن نے وزارت خزانہ کے اعلی حکام کے ساتھ مل کر حلوہ رسم میں حصہ لیا

Jan 22, 2019 12:48 PM IST | Updated on: Jan 22, 2019 12:48 PM IST
مودی حکومت کے بجٹ کی چھپائی شروع، جانیں کیوں اگلے 11 دن گھر نہیں جا سکتے ہیں یہ 100 افسران

پی ٹی آئی فوٹو، اتل یادو

مالی سال 2019-20 کے لئے عبوری بجٹ کی چھپائی کا کام پیر کے روز شروع ہو گیا۔ وزارت مالیات میں روایتی حلوہ رسم کے انعقاد کے ساتھ بجٹ دستاویزات کی چھپائی کی رسمی طور پر شروعات کی گئی۔ اس کے ساتھ ہی 100 افسران بجٹ پیش ہونے والے دن تک کے لئے ایک کمرے میں قید ہو گئے ہیں۔

دراصل، بجٹ چھپائی کا کام شروع ہونے سے پہلے بجٹ تیار کرنے کے عمل سے براہ راست طور پر منسلک وزارت کے افسران کو حلوہ رسم کی تقریب کے بعد وزارت میں ہی رہنا پڑتا ہے۔ یہ افسران پارلیمنٹ میں بجٹ پیش ہونے تک وزارت میں ہی رہتے ہیں اور باہری دنیا یہاں تک کہ اہل خانہ سے بھی ان کا رابطہ نہیں ہوتا ہے۔

Loading...

افسران کو فون یا ای میل کے ذریعے کسی سے رابطہ کرنے کی اجازت نہیں ہوتی ہے۔ وزارت کے صرف اعلی حکام کو ہی گھر جانے کی اجازت ہوتی ہے۔ پیر کو معاشی امور کے وزرائے مملکت شیو پرتاپ شکلا اور پان رادھا کرشنن نے وزارت خزانہ کے اعلی حکام کے ساتھ مل کر حلوہ رسم میں حصہ لیا۔ تاہم وزیر خزانہ ارون جیٹلی فی الحال علاج کے لئے امریکہ میں ہیں ایسے میں وہ اس رسم میں حصہ نہیں لے پائے۔

یہ بھی پڑھیں: بجٹ 2019: جی ایس ٹی وصولی میں ہدف سے پیچھے ہے حکومت، مالی خسارہ کی کیسے ہو گی بھرپائی؟

نریندر مودی کی قیادت میں مرکزی حکومت 1 فروری کو عبوری بجٹ پیش کرے گی۔ عام انتخابات کی وجہ سے عبوری بجٹ پیش کیا جائے گا۔ اگلے مالی سال کا مکمل بجٹ عام انتخابات کے بعد آنے والی نئی حکومت پیش کرے گی۔

Loading...