گروگرام : آبروریزی کے بعد تین سال کی بچی کا بے رحمی سے قتل ، پرائیویٹ پارٹ میں ڈالی لکڑی

دہلی سے متصل گروگرام میں دل دہلادینے والا ایک واقعہ سامنے آیا ہے ۔ تین سال کی ایک بچی کی آبروریزی کرکے اس کا قتل کردیا گیا ۔ بچی کا جسم اینٹوں سے دبا ہوا تھا اور اس کے پرائیویٹ پارٹ میں 10 سینٹی میٹر کی لکڑی گھسی ہوئی تھی ۔

Nov 13, 2018 01:47 PM IST | Updated on: Nov 13, 2018 01:47 PM IST
گروگرام : آبروریزی کے بعد تین سال کی بچی کا بے رحمی سے قتل ، پرائیویٹ پارٹ میں ڈالی لکڑی

علامتی تصویر

دہلی سے متصل گروگرام میں دل دہلادینے والا ایک واقعہ سامنے آیا ہے ۔ تین سال کی ایک بچی کی آبروریزی کرکے اس کا قتل کردیا گیا ۔ بچی کا جسم اینٹوں سے دبا ہوا تھا اور اس کے پرائیویٹ پارٹ میں 10 سینٹی میٹر کی لکڑی گھسی ہوئی تھی ۔ اس کے چہرے پر ایک پالیتھن بیگ پڑا ہوا تھا ۔ بچی کی لاش عریاں حالت میں سیکٹر 66 میں ملی ۔

بچی اتوار کی صبح سے غائب تھی ۔ حالانکہ گھر والوں نے غائب ہونے کی شکایت پولیس میں درج نہیں کرائی تھی اور خود ہی اس کی تلاش میں لگے ہوئے تھے ۔ پولیس نے بتایا کہ پیر کو بچی کی لاش گوگا کالونی میں ایک خالی دکان کے پاس ملی۔ افسران کے مطابق بچی کو ایک پڑوسی نے دیکھا تو پولیس کو خبر کی گئی ۔

ہندوستان ٹائمس کے مطابق پوسٹ مارٹم سے پتہ چلتا ہے کہ قتل سے پہلے بچی کی بے رحمی سے پٹائی کی گئی تھی ۔ اس کے سینے ، کمر اور پیٹھ پر سنگین چوٹوں کے نشان پائے گئے ہیں ۔ سول اسپتال کے فورینسک ایکسپرٹس کا کہنا ہے کہ اس کی موت سر پر چوٹ لگنے اور اندرونی طور پر خون بہنے سے ہوئی ہے۔ اس کے سر پر کسی بھاری چیز سے وار کیا گیا ، جس کی وجہ سے اس کی کھوپڑی میںگہری چوٹ آئی تھی ۔

فی الحال اس کی تصدیق نہیں ہوسکی ہے کہ آبروریزی سے پہلے اس کو کچھ کھلا پلا کر بیہوش کیا گیا تھا یا نہیں ۔ جبکہ واردات کے وقت کسی نے اس کے چیخنے اور چلانے کی آواز بھی نہیں سنی ۔ پولیس کی اتبدائی جانچ سے پتہ چلتا ہے کہ ملزم بچی کو چاکلیٹ دینے کے بہانے پھسلا کر اپنے ساتھ لے گیا ۔ اس وقت وہ دوسری بچیوں کے ساتھ کھیل رہی تھی ۔ دوسری بچیوں نے اس کے اہل خانہ کو اس بارے میں بتایا ، لیکن اہل خانہ نے پولیس کو اطلاع دینے کی بجائے خود ہی تلاش کرنے کی کوشش کی ۔

Loading...

یہ بھی پڑھیں : نرسنگ ہوم میں یرغمال بناکر ڈاکٹر نے نابالغ لڑکی کی آبروریزی کی ، کیس درج

یہ بھی پڑھیں : بی جے پی کے سابق ممبر اسمبلی سمیت 15 لوگوں پر اجتماعی آبروریزی کا الزام ، ایف آئی آر درج

 

 

 

Loading...