منہ بولے پھوپھا نے 10 سال کی بچی کی کئی دنوں تک کی آبروریزی ، کچھ اس طرح ہوا انکشاف

ریواڑی میں رشتوں کو تار تار کرنےو الا واقعہ سامنے آیا ہے ، جہاں ایک منہ بولے پھوپھا نے 10 سال کی بچی کے ساتھ وہ کچھ کیا ، جس کا تصور بھی نہیں کیا جاسکتا ۔

Aug 30, 2018 08:01 PM IST | Updated on: Aug 30, 2018 08:01 PM IST
منہ بولے پھوپھا نے 10 سال کی بچی کی کئی دنوں تک کی آبروریزی ، کچھ اس طرح ہوا انکشاف

علامتی تصویر

ریواڑی میں رشتوں کو تار تار کرنےو الا واقعہ سامنے آیا ہے ، جہاں ایک منہ بولے پھوپھا نے 10 سال کی بچی کے ساتھ وہ کچھ کیا ، جس کا تصور بھی نہیں کیا جاسکتا ۔ پھوپھا نے کئی دنوں تک بچی کے ساتھ حیوانیت کی ساری حدیں پار کیں۔ پولیس نے ملزم پھوپھا کو گرفتار کرکے عدالت میں پیش کیا ، جہاں اس کو جیل بھیج دیا گیا ۔

بتادیں کہ 17 اگست کو دس سال کی بچی لاوارث حالت میں پولیس کو سیکٹر تین علاقہ میں گھومتی ہوئی ملی ۔ اس بچی کی بال کلیان سمیتی نے ناری نکیتن میں مسلسل اس کی کاونسلنگ کی ، جس کے بعد بچی نے اس کے ساتھ ہوئی درندگی کی پوری کہانی بیان کردی ۔

پولیس نے 23 اگست کو ایک شخص سمیت دو خواتین پر پوسکو ایکٹ کی دفعات کے تحت کیس درج کیا ۔ پولیس کی جانچ میں انکشاف ہوا کہ بچی کے پاس والدین نہیں ہیں اور بچی اپنی منہ بولی پھوپھی کے گھر رہتی ہے ۔ یہاں منہ بولا پھوپھا نے بچی کے ساتھ کئی مرتبہ درندگی کی ۔

واقعہ کا انکشاف اس وقت ہوا جب پھوپھی نے بچی کو شہر کے ایک ٹفن پیکنگ کرنے والے شخص کے یہاں نوکری پر لگادیا اور وہاں سے بچی سڑک پر لاوارث حالت میں گھومتی ہوئی ملی ۔ فی الحال پولیس نے ریواڑی کے گاوں اہرودھ کے پرمود نام کے شخص کو گرفتار کرلیا ہے ، جس کو عدالت میں پیش کرکے جیل بھیج دیا گیا ۔ جبکہ ملزم دو خواتین کی تلاش میں پولیس مصروف ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ معاملہ کی جانچ جاری ہے ۔ دونوں ملزم خواتین کو بھی جلد ہی گرفتار کرلیا جائے گا۔

Loading...

Loading...