جموں وکشمیر میں ہندو۔ مسلم مل کر کر رہے ہیں مندر کی تعمیر

مقامی پنڈتوں اور مسلمانوں نے مندر کی تعمیر کرنے کے حوالے سے نیک خواہشات ظاہر کئے ہیں

Oct 22, 2018 01:11 PM IST | Updated on: Oct 22, 2018 01:11 PM IST
جموں وکشمیر میں ہندو۔ مسلم مل کر کر رہے ہیں مندر کی تعمیر

وادی کشمیر میں حالات کیسے بھی رہے ہوں  لیکن یہاں کے ہندو مسلم بھائی چارے پر اس کا کوئی اثر نہیں پڑا ہے۔ قصبہ ترال کے ہاری پاری گام علاقے  میں اس کی ایک تازہ مثال دیکھنے کو مل رہی ہے جہاں  کشمیری پنڈتوں کی جانب سے ایک مندر کی تعمیر کا کام شروع کیا گیا ہے جس کو تعمیر کرنے میں مقامی مسلمان بھی بھر پور تعاون کررہے ہیں۔

مقامی پنڈتوں کا کہنا ہے کہ جس جگہ مندر کی تعمیر کی جا رہی ہے یہاں ایک صدیوں پرانا مندر آباد تھا جو کافی بوسیدہ ہوچکا تھا۔ انہوں نے کہا کہ مقامی مسلمانوں نے ہی انہیں مشورہ دیا کہ یہاں ایک نیا مندر بننا چاہئے جس کی سنگ بنیاد گزشتہ روز رکھی گئی اور مسلمان برادری بھی پنڈتوں کے ساتھ ساتھ اس مندر کی تعمیر میں اپنا تعاون پیش کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مندر کی تعمیر میں ہمیں مسلمانوں سے بہت زیادہ تعاون مل رہا ہے۔ ان کے تعاون کے بغیر ہم مندر نہیں بنا سکتے تھے۔

مقامی پنڈتوں اور مسلمانوں کا کہنا ہے کہ ہم ہر وقت ایک دوسرے کے سکھ  دکھ میں برابر کے شریک رہتے ہیں۔ مقامی پنڈتوں اور مسلمانوں نے مندر کی تعمیر کرنے کے حوالے سے نیک خواہشات ظاہر کئے ہیں۔

Loading...

Loading...