اترپردیش : تین طلاق پر سیاست کے خلاف اب ہندو خواتین نے بھی اٹھائی آواز، کہی یہ بات ؟

تین طلاق پر ہونے والی سیاست کے خلاف اب ہندو خواتین نے بھی اپنی صدائے احتجاج بلند کیا ہے۔ خواتین کا کہنا ہےکہ تین طلاق کے معاملہ میں مرکزی حکومت مسلم خواتین کو گمراہ کر رہی ہے۔

Mar 07, 2018 10:31 PM IST | Updated on: Mar 07, 2018 10:31 PM IST
اترپردیش : تین طلاق پر سیاست کے خلاف اب ہندو خواتین نے بھی اٹھائی آواز، کہی یہ بات ؟

الہ آباد : تین طلاق پر ہونے والی سیاست کے خلاف اب ہندو خواتین نے بھی اپنی صدائے احتجاج بلند کیا ہے۔ خواتین کا کہنا ہےکہ تین طلاق کے معاملہ میں مرکزی حکومت مسلم خواتین کو گمراہ کر رہی ہے۔ خواتین کا یہ بھی کہنا ہے کہ ملک کی خواتین کے مسائل مشترکہ ہیں اور ان کو مذہب کے خانوں میں تقسیم نہیں کیا جا سکتا ۔

الہ آباد میں خواتین کے حقوق کے لئے کام کرنے والی سر کردہ تنظیم ’’ میلا ادھیکار سنگٹھن ‘‘ نے تین طلاق پر ہونے والی ساست پر اپنی سخت نا راضگی کا اظہار کیا ۔ تنظیم کا کہنا ہے کہ مرکزی حکومت طرف سے تین طلاق کے بارے میں خواتین کو گمراہ کیا جا رہا ہے۔ خواتین کا کہنا تھا کہ اگر حکومت مسلم خواتین کے لئے واقعی سنجیدہ ہے تو ان کی ترقی کے لئے ٹھوس اقدامات کرے۔

منعقدہ پروگرام تین طلاق اور حلالہ جیسے رسموں کے خلاف باتیں تو کی گئیں لیکن ساتھ ہی خواتین کا کہنا تھا کہ ان مسائل کو حل کرنے کے بجائے اس پر گمراہ کن سیاست کی جا رہی ہے۔ خواتین کا الزام تھا کہ اس گندی سیاست میں تمام پارٹیاں برابر کی شریک ہیں۔اس پروگرام میں بڑی تعداد میں مسلم خواتین نے بھی شرکت کی ۔

Loading...

Loading...