لون معاملے میں چندا کوچر نے توڑے قواعد، آئی سی آئی سی آئی وصولے گی سبھی بونس اور انکریمنٹ

آئی سی آئی سی آئی بینک کو 3250 کروڑ روپئے کے معاملے میں جسٹس بی این شری کرشنا سے جانچ رپورٹ ملی ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ چندا کوچر نے انٹریسٹ کے مسئلے کو نظر انداز کیا ہے۔

Jan 30, 2019 11:10 PM IST | Updated on: Jan 30, 2019 11:18 PM IST
لون معاملے میں چندا کوچر نے توڑے قواعد، آئی سی آئی سی آئی وصولے گی سبھی بونس اور انکریمنٹ

ویڈیوکان لون معاملے میں آئی سی آئی سی آئی بینک کی سابق سی ای او چند ا کوچر نے قواعد کی خلاف ورزی کی ہے۔ آئی سی آئی سی آئی  بینک کو 3250 کروڑ روپئے کے معاملے میں جسٹس بی این شری کرشنا سے جانچ رپورٹ ملی ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ چندا کوچر نے انٹریسٹ کے مسئلے کو نظر انداز کیا ہے۔ شری کرشنا کمیٹی لون گھوٹالے کی جانچ کر رہی تھی۔ چندا کوچر کے خلاف ویڈیوکان لون معاملے میں جانچ چلی۔ آئی سی آئی سی آئی  بینک نے کوچر کو سروس سے برخاست کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔  چند اکوچر کے استعفیٰ  کو ان کا ٹرمینیشن مانا جائے گا۔

بونس ، انکریمینٹ وصولے جائیں گے: آئی سی آئی سی آئی بینک نے کہا ہے کہ چندا کوچر کو 2009۔18 کے درمیان دیا گیا بونس واپس لیا جائے گا۔ اس کے علاوہ کوچر کو موجودہ یا بقایہ پیمنٹ نہیں ملے گا۔ چندا کوچر کو ملنے والی سبھی سہولیات ختم ہوں گی۔

کیا ہے پورا معاملہ؟ چندا کوچر پر مارچ 2018 میں اپنے شوہر کو اقتصادی فائدہ پہنچانے کیلئے اپنے عہدے کا غلط استعمال کا الزام لگایا گیا تھا۔ انہوں نے نیو پاور رنیوویبلس نام کی کمپنی کو 3250 کروڑ روپئے کا 2012 میں قرض دلایا جس کا مالیکانہ حق چندا کوچر کے شوہردیپک کوچراور ویڈیو کان کے مالک وینوگوپال دھوت کے پاس ہے۔

وینوگوپال دھوت نے بیان دیا تھا کہ جب بینک سے کمپنی کو لون ملا اس وقت صرف چندا کوچر لون اپروو کرنے والی کمیٹی کی رکن تھیں اور وہ اس کے سبھی اراکین کو جانتے ہیں۔ اس پورے تنازع کا سبب چندا کوچر کے شوہر دیپک کوچر ہیں۔ اس قرض کو بعد میں این پی اے میں تبدیل کر دیا گیا تھا۔

Loading...

Loading...
Listen to the latest songs, only on JioSaavn.com