عراق سے وسیم رضوی کے خلاف آیا فتوی ، کہا : رام مندر کیلئے وقف کی زمین نہیں دے سکتے

ڈاکٹر مظہر نقوی کا کہنا ہے کہ اس طرح کے وسیم رضوی کے ہتھکنڈوں سے مذہبی دوریاں آپس میں بڑھ رہی تھیں ۔

Aug 28, 2018 09:02 PM IST | Updated on: Aug 28, 2018 09:02 PM IST
عراق سے وسیم رضوی کے خلاف آیا فتوی ، کہا : رام مندر کیلئے وقف کی زمین نہیں دے سکتے

شیعہ وقف بورڈ کے چیئرمین وسیم رضوی

شیعہ وقف بورڈ کے چیئرمین وسیم رضوی کی جانب سے اجودھیا کی متنازع زمین کو وقف کی زمین بتاکر اس کو مندر کی تعمیر کیلئے دئے جانے کیلئے سپریم کورٹ میں عرضی داخل کی گئی تھی ، جس کے بعد کانپور کے ڈاکٹر مظہر نقوی نے سب سے بڑے شیعہ عالم دین آیت اللہ سید علی الحسینی السیستانی ، عراق سے ایک فتوی طلب کیا تھا کہ کیا وقف کی زمین کسی عمارت یا مذہبی عمارت کی تعمیر کیلئے دی جاسکتی ہے ، اب اس کا جواب آگیا ہے۔

جواب میں بتایا گیا ہے کہ مذہبی اعتبار سے وقف کی زمین کو نہیں دیا جاسکتا ہے ۔ اس بات کی جانکاری ایک پریس کانفرنس کے ذریعہ ڈاکٹر مظہر نقوی نے دی ۔

ڈاکٹر مظہر نقوی کا کہنا ہے کہ اس طرح کے وسیم رضوی کے ہتھکنڈوں سے مذہبی دوریاں آپس میں بڑھ رہی تھیں ۔ ساتھ ہی ساتھ مسلموں سے سنی اور شیعہ کے درمیان ایک دیوار بن رہی تھی ، اس لئے اس بات کو واضح کرنا ضروری تھا ، اس لئے عراق سے فتوی طلب کرکے تصویر صاف کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔

Loading...

Loading...