آئی آر سی ٹی سی گھوٹالہ معاملہ: لالو، رابڑی اور تیجسوی یادو کو ملی ضمانت

دہلی کی ایک خصوصی عدالت نے بہار کے سابق وزیراعلی لالو پرساد یادو، اہلیہ رابڑی دیوی اور ان کے چھوٹے بیٹے تیجسوی یادو کو منی لانڈرنگ قانون کے التزام کے تحت انڈین ریلوے کیٹرنگ اور سیاحت کارپوریشن (آئی آر سی ٹی سی) سے جڑے معاملے میں پیر کو باضابطہ ضمانت دے دی۔

Jan 28, 2019 03:40 PM IST | Updated on: Jan 28, 2019 03:41 PM IST
آئی آر سی ٹی سی گھوٹالہ معاملہ: لالو، رابڑی اور تیجسوی یادو کو ملی ضمانت

بہار کے سابق وزیراعلی لالو پرساد یادو: فائل فوٹو۔

دہلی کی ایک خصوصی عدالت نے بہار کے سابق وزیراعلی لالو پرساد یادو، اہلیہ رابڑی دیوی اور ان کے چھوٹے بیٹے تیجسوی یادو کو منی لانڈرنگ قانون کے التزام کے تحت انڈین ریلوے کیٹرنگ اور سیاحت کارپوریشن (آئی آر سی ٹی سی) سے جڑے معاملے میں پیر کو باضابطہ ضمانت دے دی۔

مرکزی تحقیقاتی بیورو(سی بی آئی) کے جج ارون بھاردواج نے دسمبر میں آئی آر سی ٹی سی گھپلہ معاملے میں بہار کے سابق وزیراعلی لالو پرساد یادو سمیت 20 لوگوں کو عبوری ضمانت دے دی تھی اور بعد میں عبوری ضمانت کی مدت 28 جنوری تک بڑھا دی تھی۔انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کی جانب سے لالو  یادو، رابڑی دیوی اور تیجسوی یادو کے خلاف منی لانڈرنگ قانون کے تحت معاملہ درج کیا گیا تھا۔

سی بی آئی نے گزشتہ سال جولائی میں لالو پرساد یادو، رابڑی دیوی، تیجسوی یادو اور سابق مرکزی وزیر پریم چند گپتا کی اہلیہ سرلا گپتا ،سجاتا ہوٹل کے ڈائیریکٹر اور چانکیا ہوٹل کے مالک وجے اور ونے کوچر،ڈلائٹ مارکیٹنگ کمپنی ،جو اب لارا پروجیکٹس کے نام سے جانی جاتی ہے اور آئی آر سی ٹی سی کے مارکٹنگ ڈائریکٹر پی کے گوئل کے خلاف معاملہ درج کرایا تھا۔ سی بی آئی نے الزام لگایا تھا کہ راشٹریہ جنتا دل کے سربراہ نے کوچر کو غلط طریقےسے فائدہ پہنچانے کے لئے اپنے سرکاری عہدے کا غلط استعمال کیا تھا۔

Loading...

Loading...