دہلی میں سیلنگ معاملہ پرعام آدمی پارٹی اوربھارتیہ جنتا پارٹی میں تکرار

راجدھانی دہلی میں جاری سیلنگ مہم کے معاملے پر آج یہاں وزیر اعلی کی رہائش گاہ پر بھارتیہ جنتا پارٹی کے رہنماؤں کے ساتھ ہوئی میٹنگ نہ صرف بے نتیجہ رہی بلکہ بی جے پی لیڈروں نے میٹنگ میں ان کے ساتھ بدسلوکی کئے جانے کا الزام لگاتے ہوئے احتجاج کیا۔

Jan 30, 2018 02:17 PM IST | Updated on: Jan 30, 2018 04:57 PM IST
دہلی میں سیلنگ معاملہ پرعام آدمی پارٹی اوربھارتیہ جنتا پارٹی میں تکرار

دہلی سی ایم اروند کیجریوال کا بی جے پی پر نشانہ

نئی دہلی۔ راجدھانی دہلی میں جاری سیلنگ مہم کے معاملے پر آج یہاں وزیر اعلی کی رہائش گاہ پر بھارتیہ جنتا پارٹی کے رہنماؤں کے ساتھ ہوئی میٹنگ نہ صرف بے نتیجہ رہی بلکہ بی جے پی لیڈروں نے میٹنگ میں ان کے ساتھ بدسلوکی کئے جانے کا الزام لگاتے ہوئے احتجاج کیا۔ سیلنگ کے معاملے پر وزیر اعلی اروند کیجریوال نے آج اپنی رہائش گاہ پر میٹنگ بلائی تھی۔ اس میٹنگ میں آپ کے لیڈروں کے علاوہ بی جے پی کی ریاستی یونٹ کے صدر منوج تیواری کے ساتھ کئی بی جے پی لیڈر بھی موجود تھے۔

میٹنگ میں سیلنگ کے سلسلے میں دونوں فریقوں کے درمیان اتنی تیکھی بحث ہوئی کہ بی جے پی لیڈر میٹنگ سے اٹھ کر باہر نکل آئے اور وزیر اعلی کی رہائش کے باہر دھرنے پر بیٹھ گئے۔ خبر ہے کہ مسٹر تیواری نے آپ لیڈروں کے خلاف پولیس میں شکایت بھی درج کرائی ہے۔ بی جے پی کے رہنماؤں نے الزام لگایا ہے کہ کیجریوال نے میٹنگ میں ایک بڑی بھیڑجمع کر رکھی تھی۔ یہ لوگ اتنا شور شرابہ کر رہے تھے کہ ان کو اپنی بات کہنےکا موقع ہی نہیں دیا گیا۔ دوسری طرف مسٹر کیجریوال نے میٹنگ کے بعد صحافیوں کو بتایا کہ لیفٹیننٹ گورنر چاہیں تو اس مسئلے کا حل ایک دن میں نکل سکتا ہے۔ اس سلسلے میں ان کے پاس جو فائلیں ہیں وہ ان پر دستخط نہیں کررہے ہیں ۔ اگر اس ہفتے بھی وہ کچھ نہیں کرسکے تو ہم سیلنگ کی کارروائی پر روک کے لئے سپریم کورٹ کا دروازہ کھٹکھٹائیں گے۔

انہوں نے الزام لگایا کہ سیلنگ میں بھی امتیاز برتا جا رہا ہے۔ تقریباً 351 سڑکوں پر سیلنگ نہیں ہو رہی ہے۔ سروے کی رپورٹ ابھی تک دہلی میونسپل کارپوریشن نے ریاستی حکومت کو نہیں سونپی ہے۔ رپورٹ ملنے کے بعد وہ اسے سپریم کورٹ کو سونپیں گے ۔ انہوں نے كنورژن چارج مکمل طور پر ختم کئے جانے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ دہلی میں سیلنگ کی وجہ سے چھوٹے تاجر بہت پریشان ہیں۔ پہلے نوٹ کی منسوخی ، پھر جی ایس ٹی اور اب سیلنگ نے تاجروں کو بدحال کر دیا ہے۔

Loading...

Loading...