کشمیر میں گرفتاریوں پر محبوبہ مفتی کا سخت ردعمل، کہا آپ ایک شخص کو قید کرسکتے ہیں لیکن اس کے نظریے کو نہیں

وادی کشمیر میں انتظامیہ کی طرف سے علحیدگی پسند لیڈروں اور بعض مذہبی جماعتوں کے خلاف شروع کئے گئے کریک ڈاؤن پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے محبوبہ مفتی نے کہا ہے کہ انتظامیہ کی طرف سے اٹھائے جارہے ایسے اقدام آگ پر تیل کام ہی ادا کرسکتے ہیں۔

Feb 23, 2019 02:13 PM IST | Updated on: Feb 23, 2019 02:31 PM IST
کشمیر میں گرفتاریوں پر محبوبہ مفتی کا سخت ردعمل، کہا آپ ایک شخص کو قید کرسکتے ہیں لیکن اس کے نظریے کو نہیں

جموں وکشمیر کی سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی: فائل فوٹو۔

وادی کشمیر میں انتظامیہ کی طرف سے علحیدگی پسند لیڈروں اور بعض مذہبی جماعتوں کے خلاف شروع کئے گئے کریک ڈاؤن پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے پی ڈی پی صدر اور سابق وازیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے کہا ہے کہ انتظامیہ کی طرف سے اٹھائے جارہے ایسے اقدام آگ پر تیل کام ہی ادا کرسکتے ہیں۔ سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ چوبیس گھنٹوں سے حریت لیڈروں اور جماعت اسلامی کے کارکنوں کی گرفتاری سے جموں کشمیر میں حالات مزید ابتر ہی ہوں گے۔

انہوں نے سوالیہ انداز میں کہا کہ ان لیڈروں اور کارکنوں کو کن قانونی بنیادوں پر گرفتار کیا گیا ہے۔ محبوبہ نے کہا کہ ایک شخص کو تو گرفتار کیا جاسکتا ہے لیکن اس کی فکر محصور نہیں کیا جاسکتا ہے۔

دریں اثنا پیپلز کانفرنس کے چیئر اورسابق وزیر سجاد غنی لون نے حریت لیڈروں اور جماعت اسلامی کے لیڈران و کارکنوں کی اچانک گرفتاری پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ ماضی میں بھی ایسا کیا گیا لیکن اس سے حالات بدتر ہی ہوئے۔ پلوامہ حملہ: جموں۔کشمیر بھیجی گئیں سیکورٹی فورسز کی 100 کمپنیاں، حراست میں لئے گئے یاسین ملک

Loading...

انہوں نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ سال 1990 میں بھی لیڈروں کو گرفتار کرکے ملک کے مختلف جیلوں جیسے جودھ پور وغیرہ منتقل کیا گیا لیکن اس کے منفی نتائج ہی بر آمد ہوئے۔

انہوں نے کہا کہ ایسا کرنے سےبچنے کی ضرورت ہے اس سے حالات مزید بد تر ہوں گے۔

Loading...