پلوامہ شہیدوں کے لئے پرینکا گاندھی نے رکھا 2 منٹ کا مون، رد کر دی پریس کانفرنس

پلوامہ خود کش حملے کی مذمت کرتے ہوئے پرینکا گاندھی نے کہاکہ 'میں جانتی ہوں اس غم کی گھڑی میں کچھ بھی کہنا کافی نہیں ہے۔ پھر بھی شہید کے اہل خانہ کے پیچھے نہ صرف کانگریس بلکہ پورا ملک کھڑا ہے'۔

Feb 14, 2019 09:25 PM IST | Updated on: Feb 14, 2019 09:43 PM IST
پلوامہ شہیدوں کے لئے پرینکا گاندھی نے رکھا 2 منٹ کا مون، رد کر دی پریس کانفرنس

جموں۔کشمیر میں ہوئے دہشت گردانہ حملے کی مذمت کرتے ہوئے پرینکا گاندھی نے کہا کہ 'جموں۔کشمیر کے دہشت گردانہ حملے میں شہید جوانوں کیلئے تعزیت پیش کرتی ہوں، افسوس ظاہر کرتی ہوں۔ ان کے اہل خانہ کا درد میں اچھی طرح سمجتی ہوں۔ میں جانتی ہوں اس غم کی گھڑی میں کچھ بھی کہنا کافی نہیں ہے۔ پھر بھی شہید کے اہل خانہ کے پیچھے نہ صرف کانگریس بلکہ پورا ملک کھڑا ہے۔ جموں۔کشمیر میں آئے دن ہمارے جوان شہید ہو رہے ہیں جو گہری فکر کا موضوع ہے۔ میں حکومت سے مانگ کرتی ہوں کہ ان واقعات کو روکنے کیلئے سخت قدم اٹھائے جائیں۔

جموں۔کشمیر میں ہوئے دہشت گردانہ حملے کی وجہ سے کانگریس کی جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی کی پریس کانفرنس نہیں ہو سکی۔ پلوامہ شہیدوں کو خراج عقیدت پیش کرنے کے بعد پرینکا گاندھی نے کہا کہ یہ وقت سیاسی چرچا کیلئے مناسب نہیں ہے۔ جموں و کشمیر کے پلوامہ میں ہوئے دہشت گردانہ حملے میں شہید ہوئے جوانوں کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے یوپی کے کانگریس دفتر میں دو منٹ مون رکھا گیا۔

Loading...

جموں و کشمیر میں 20 سال میں سب سے بڑا دہشت گردانہ حملہ ہوا ہے۔ پلوامہ میں اونتی پورہ کے گوری پورہ علاقے میں سی آر پی ایف کے قافلے پر دہشت گردوں نے آئی ای ڈی سے بڑا دہشت گردانہ حملہ کیا ہے پھر تابڑتوڑ فائرنگ کی۔ اطلاعات کے مطابق ایجنسی اے این آئی کے مطابق، جموں۔کشمیر حکومت کے صلاح کار کے۔وجے کمار نے حملے میں 40 جوانوں کے شہید ہونے کی تصدیق کی ہے جبکہ 45 جوانوں کے زخمی ہونے کی خبر ہے۔ شہیدوں کی تعداد آگے بڑھ سکتی ہے۔

جموں۔کشمیر: 20 سال میں سب سے بڑا دہشت گردانہ حملہ، 40 سی آر پی ایف جوان شہید، 45 زخمی

پلوامہ خود کش حملہ: جیش محمد دہشت گرد نے 350 کلو بارود سے بھری کار سے ماری تھی سی آر پی ایف بس کو ٹکر

'جموں۔کشمیر: پلوامہ حملے پر بولے وزیر اعظم نریندر مودی، کہا 'بیکار نہیں جائے گی جوانوں کی قربانی

پلوامہ بڑا دہشت گردانہ حملہ: محبوبہ مفتی نے کہا، اس حملے کی مذمت کے لئے کوئی لفظ ہی نہیں ہے

اس سے پہلے پرینکا گاندھی نے ایس پی۔ بی ایس پی گٹھ بندھن سے سمجھوتہ کرنے کے موضوع پر برا بیان دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایس پی اور بی ایس پی سے یو پی میں اتحاد کی بات بھول جایئے ۔ اب صرف چھوٹی پارٹیوں سے سمجھوتہ کیا جائے گا۔ انہوں نے اپنے بارے میں کہا کہ 2019 میں یوپی میں کرشمے کی امید نہیں ہے لیکن 2022 میں بازی پلٹنی ہے۔

 

Loading...