دو کروڑ کیا ، سو کروڑ روپے بھی دیدئےجائیں ، تب بھی ہم سمجھوتہ نہیں کریں گے: جنید کے والد جلال الدین

جمعرات کو عدالت میں سماعت کے دوران سرکاری وکیل دیپک سبھروال نے دعویٰ کیا تھا کہ جنید کے والد سمجھوتہ کرنے کےلئے دو کروڑ روپئے اور زمین کا مطالبہ کر رہے ہیں۔

Nov 04, 2017 06:50 PM IST | Updated on: Nov 04, 2017 07:04 PM IST
دو کروڑ کیا ، سو کروڑ روپے بھی دیدئےجائیں ، تب بھی ہم سمجھوتہ نہیں کریں گے: جنید کے والد جلال الدین

file photo

فرید آباد  : جنید قتل معاملہ میں جنید کے والد کا سخت ردعمل سامنے آیا ہے۔ جمعرات کو عدالت میں سماعت کے دوران سرکاری وکیل دیپک سبھروال نے دعویٰ کیا تھا کہ جنید کے والد سمجھوتہ کرنے کےلئے دو کروڑ روپئے اور زمین کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ ادھر وکیل کے اس دعویٰ کو چھوٹ کا پلندہ قرار دیتے ہوئے مقتول جنید کے والد جلال الدین خان نے سخت ردعمل کا اظہار کیا ہے۔

جلال الدین نے کہا ہے کہ انھیں دو کروڑ کیا ، سو کروڑ روپئے بھی ددئےجائیں گے تو بھی وہ سمجھوتہ نہیں کریں گے۔ خیال رہے کہ جنید کے والد جلال الدین کا کہنا ہے کہ کیس واپس لینے کےلئے شروع سے ہی ان پر دباؤ بنانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

واضح رہے کہ بلبھ گڑھ میں ٹرین کے سفر کے دوران جنید اور اس کے بھائیوں پر ہندو شدت پسندوں نے حملہ کیا تھا ، جس میں جنید کی موت ہوگئی تھی ۔ کافی ہنگامہ کے بعد اس معاملہ کی تفتیش شروع ہوئی تھی ، لیکن اہل خانہ کے مطابق کیس واپس لینے کے لئے طرح طرح سے انہیں پریشان کیا جاتا رہا ہے۔

گزشتہ دنوں اس معاملہ میں بحث کے دوران سرکاری وکیل پر ملزمان کے وکیل کی مدد کا بھی الزام لگ چکا ہے ۔ وہ جب ملزموں کے وکیل کو کچھ پوانٹس یاد دلا رہے تھے ، تو آخرکار جج کو مداخلت کرنی پڑی کیا کہ آپ ان سے ملے ہوئے ہیں۔

Loading...

Loading...