نقوی نے حج 2018 کی احسن تکمیل کا سہرا بچولیوں سے نجات کے سر باندھا

اقلیتی وزیر نے کہا کہ حج کمیٹی آف انڈیا کی فعال کارکردگی اور پرائیوٹ ٹور آپریٹروں کی سرگرمیوں میں لائی جانے والی ٹرانسپیرنسی کے نتیجے میں ہندستانی عازمین نے اخراجات کے اعتبار سے اس مرتبہ اطمینان بخش سفر حج کیا ہے۔

Aug 30, 2018 04:39 PM IST | Updated on: Aug 30, 2018 04:39 PM IST
نقوی نے حج 2018 کی احسن تکمیل کا سہرا بچولیوں سے نجات کے سر باندھا

اقلیتی امور کے مرکزی وزیر مختار عباس نقوی: فائل فوٹو۔

 کسی سبسڈی کے بغیر نسبتاً کم سفری اخراجات کے ساتھ حج 2018 میں ہندوستانی حاجیوں کی شرکت اور ایک اہم اسلامی فریضے کے احسن تکمیل کا سہرا اقلیتی امور کے مرکزی وزیر مختار عباس نقوی نے بچولیوں اور بے ایمانوں سے نجات کی کامیاب کوشش کے سر باندھا۔ یہاں نامہ نگاروں سے ایک غیر رسمی ملاقات میں انہوں نے اظہار تشکر کے ساتھ بتایا کہ اب جبکہ حجاج کرام کی واپسی کا سفر شروع ہو چکا ہے وہ امید کرتے ہیں طیاروں کی تاخیر سے آمد اور دوسری سہولتوں کی کمی کی سابقہ شکایات کا دائرہ بھی محدود سے محدود تر کر نےکی کوشش بار آور ہوگی۔ انہوں نے بتایا کہ سیلاب سےبری طرح متاثر ریاست کیرالہ کے حاجیوں کی واپسی اور سہولت پر خاص توجہ دی جا رہی ہے ۔

اقلیتی وزیر نے کہا کہ حج کمیٹی آف انڈیا کی فعال کارکردگی اور پرائیوٹ ٹور آپریٹروں کی سرگرمیوں میں لائی جانے والی ٹرانسپیرنسی کے نتیجے میں ہندستانی عازمین نے اخراجات کے اعتبار سے اس مرتبہ اطمینان بخش سفر حج کیا ہے۔ رہائشی کرایوں کو بھی دلالی سے پاک کرنے میں اقلیتی امور کی وزارت نے اپنی ذمہ داری بہتر سے بہتر بنانے میں کوئی کسر نہیں اٹھا رکھی۔ محرم کے بغیر حج کرنے والیوں کے قیام و طعام کا پورا نظم خواتین کے ہاتھ میں رہا ۔ مجموعی طور پر 166387 ہندستانی خواتین نے اس مرتبہ سعادت حج حاصل کی۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے بتایا کہ سفری اخراجات کا بوجھ عازمین پر پچھلے سال جہاں 10300 کرورڑ روپے کا تھا ، اس سال عازمین کو صرف 973 کروڑ روپے ادا کرنا پڑے یعنی اس محاذ پر 57 کروڑ روپے کی کمی آئی۔

انہوں نے کہا کہ بچولیوں اور میان کاروں سے نجات کا ایک فائدہ یہ ہوا کہ جن امبارکیشن پوائنٹ کو نسبتاً مہنگا سمجھ کر عازمین کو سستے سفر کے لئے متبادل امبارکیشن پوائنٹ سے سفر حج کا مشور ہ دیا گیا تھا وہاں بھی سفر مہنگا نہیں رہا۔ لہذا واپسی کے سفر میں حاجیوں کو اپنے قریبی ہوائی اڈے تک کسی اضافی چارج کے بغیر سفر کی سہولت مہیا کی گئی۔ انہوں نے بتایا کہ اس آسانی کے انتظام میں ایک دو فلائٹیں تاخیر سے ضرور پہنچیں لیکن پرواز میں تاخیر کی سابقہ پیمانے کی شکایت سامنے نہیں آئی۔

Loading...

 نقوی نے مزید بتایا کہ اس مرتبہ 400 کی سابقہ تعداد کے برعکس صرف 37 گمشدگیوں کے واقعات ہوئے لیکن تمام گمشدگان بازیاب کر لئے گئے۔ مزید بر آں مکہ معظمہ اور مدینہ منورہ کے علاوہ جدہ حج ٹرمنل پرایک سے زیادہ اسپتال اور ڈسپنسریوں کے قیام کے ساتھ ہی اس بار میڈیکل کی آن لائن سہولت بھی حاجیوں کو فراہم کی گئی تھی تاکہ وہ اپنی عبادات کا وقت قطاروں میں لگ کر ضائع کرنے سے بچ جائیں۔

Loading...