بنگال میں فرقہ وارانہ تشدد پر کرکٹر محمد کیف نے کہا : یہ پیغمبر اسلام کی تعلیمات کے خلاف ، شرم کیجئے

مغربی بنگال میں گزشتہ چند دنوں سے جاری فرقہ وارانہ تشدد پر کرکٹر محمد کیف نے اپنا ردعمل ظاہر کیا ہے۔ کیف نے ٹویٹر کے ذریعہ اپنی رائے کا اظہار کیا اور تشدد کو شرمناک قرار دیا

Jul 07, 2017 07:35 PM IST | Updated on: Jul 07, 2017 07:35 PM IST
بنگال میں فرقہ وارانہ تشدد پر کرکٹر محمد کیف نے کہا : یہ پیغمبر اسلام کی تعلیمات کے خلاف ، شرم کیجئے

Photo credit : OfficialMohammadKaif@facebook.com

نئی دہلی : مغربی بنگال میں گزشتہ چند دنوں سے جاری فرقہ وارانہ تشدد پر کرکٹر محمد کیف نے اپنا ردعمل ظاہر کیا ہے۔ کیف نے ٹویٹر کے ذریعہ اپنی رائے کا اظہار کیا اور تشدد کو شرمناک قرار دیا ۔

کیف نے لکھا کہ پیغمبر اسلام کی اتنی عظمت ہے کہ ان کی خلاف لکھی گئی فیس بک پوسٹ کیلئے کسی کے دفاع کی ضرورت نہیں، کروڑوں روپے کی املاک کو نقصان پہنچانا اور تشدد کرنا ان کی تعلیمات کے خلاف ہے ۔ شرم کیجئے ۔ '

خیال رہے کہ مغربی بنگال کے شمالی 24 پرگنہ میں 11 ویں کلاس کے ایک طالب کے ذریعہ پیغمبر اسلام کے خلاف فیس بک پوسٹ کرنے کے بعد فسادات شروع ہو گئے تھے۔ اس کے بعد علاقہ میں کرفیو لگا دیا ہے ، لیکن تشدد کا سلسلہ اب بھی جاری ہے۔

Loading...