کرنال میں نماز ادا کر رہے لوگوں سے مارپیٹ، مسجد میں بھی کی گئی توڑپھوڑ

ہریانہ کے کرنال میں نمازادا کر رہے مسلمانوں کے ساتھ مار پیٹ کا معاملہ پیش آیا ہے۔

May 31, 2018 11:53 AM IST | Updated on: May 31, 2018 12:48 PM IST
کرنال میں نماز ادا کر رہے لوگوں سے مارپیٹ، مسجد میں بھی کی گئی توڑپھوڑ

پولیس تھنے میں معالہ کی شکایت کرنے پہونچے مسلمان برادی کے لوگ

ہریانہ کے کرنال میں نمازادا کر رہے مسلمانوں کے ساتھ مار پیٹ کا معاملہ پیش آیا ہے ۔ یہ معاملہ نیول گاوں کا ہے ، جہاں تقریباََ درجن بھر افراد نے مسجد میں گھس کر پہلے تو بدزبانی کی اور پھر مارپیٹ شروع کر دی۔ یہی نہیں، شرپسند عناصر نے مسجد میں اینٹ کی کچی دیوار کو بھی گرا دیا اور وہاں لگے اسپیکر کی تار بھی توڑ دی ۔

اس واقعہ کے بعد مسلمانوں نے نماز بیچ میں ہی چھوڑ کر کنج پورا پولیس تھانے پہونچے اور اپنی شکایت درج کرائی ۔ پولیس نے شکایت کی بنیاد پر معاملہ کی گہرائی سے جانچ شروع کر دی ہے ۔

Loading...

وہیں، دوسری جانب گاوں کے مسلمان ڈرے سہمے ہوئے ہیں۔ متاثرین کا الزام ہے کہ گاوں کے ہی کچھ افراد نے مسجد میں ان پر حملہ کیا ۔ ان کا کہنا ہے کہ ان لوگوں نے خبردار کیا ہے کہ مسجد سے نہ اذان کی آواز آئے اور نہ ہی وہاں نماز ادا کی جائے ۔ ورنہ انجام برا ہوگا۔

اس معاملہ میں پولیس کا کہنا ہے کہ وہ اس معاملہ کی جانچ کر رہی ہے اور قصورواروں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

 

Loading...