عالمی شہرت یافتہ شاعر مظفر رزمی کو چوتھی برسی پر کیا گیا یاد

مغربی یو پی کے کیرانہ قصبہ سے تعلق رکھنے والے عالمی شہرت یافتہ شاعر مظفر رزمی کا 76 برس کی عمر میں 19 ستمبر 2013 میں اپنے آبائی وطن کیرانہ میں انتقال ہو گیا تھا۔

Sep 20, 2016 02:49 PM IST | Updated on: Sep 20, 2016 02:50 PM IST
عالمی شہرت یافتہ شاعر مظفر رزمی کو چوتھی برسی پر کیا گیا یاد

میرٹھ : وہ جبر بھی دیکھا ہے تاریخ کی نظروں نے ، لمحوں نے خطا کی تھی، صدیوں نے سزا پائی ، یہ شعر جب بھی دوہرایا جائے گا ، تو مظفر رزمی کو یاد کیا جائے گا ۔ مغربی یو پی کے کیرانہ قصبہ سے تعلق رکھنے والے عالمی شہرت یافتہ شاعر مظفر رزمی کا 76 برس کی عمر میں 19 ستمبر 2013 میں اپنے آبائی وطن کیرانہ میں انتقال ہو گیا تھا۔ کل چوتھی برسی کے موقع پر ایک بار پھر ادبی شخصیات کے ذہنوں میں مظفر رزمی کی یادیں تازہ ہو گئیں۔

عالمی شہرت یافتہ شاعر مظفر رزمی کی خاص بات یہ تھی کہ ان کی اردو غزلیں جتنی مشہور ہوئیں ، اتنی ہی ہندی میں کہی گئی کویتاؤں کو بھی مقبولیت ملی ۔ 1965 کی جنگ کے دوران فوجیوں میں جوش کا جذبہ پیدا کرنے کیلئے انکی لکھی کویتا اے ہمارے وطن ایک ترانے کے طور پر پورے ملک میں مقبول ہوئی ۔ مظفر رزمی کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے ادبی شخصیات نے ان کی ادبی خدمات کو یاد کیا۔

Loading...

Loading...