اترپردیش کے سینکڑوں اقلیتی طلبہ پری میٹرک اسکالرشپ کے لئے فارم داخل کرنے سے قاصر

ریاست اتر پردیش میں گزشتہ دنوں لیکھ پالوں کی ہڑتال کا اثر سرکاری کام کاج کے ساتھ اقلیتی طلبہ کے اسکالر شپ فارم داخل کرنے پر بھی پڑا ہے ۔

Sep 28, 2016 07:20 PM IST | Updated on: Sep 28, 2016 07:20 PM IST
اترپردیش کے سینکڑوں اقلیتی طلبہ پری میٹرک اسکالرشپ کے لئے فارم داخل کرنے سے قاصر

میرٹھ ۔ اقلیتی طلبہ کے لئے مرکزی حکومت  کی پری میٹرک اسکالرشپ کے لئے فارم داخل کرنے کی آخری تاریخ 30 ستمبر ہے لیکن ابھی بھی بڑی تعداد میں مستحقین اسکالر شپ فارم داخل کرنے سے قاصر ہیں ۔ فارم داخل نہ کرپانے کی سب سے بڑی وجہ گزشتہ دنوں سرکاری ملازمین کی طویل وقت تک چلنے والی ہڑتال ہے ۔ ہڑتال کی وجہ سے اس دوران  مستحقین  وہ ضروری کاغذات حاصل کرنے سے قاصر رہے جس کو اسکالر شپ فارم کے ساتھ پیش کرنا لازمی ہے۔

ریاست اتر پردیش میں گزشتہ دنوں لیکھ پالوں کی ہڑتال کا اثر سرکاری کام کاج کے ساتھ اقلیتی طلبہ  کے اسکالر شپ فارم داخل کرنے پر بھی پڑا ہے ۔ پری میٹرک  اسکالر شپ کے لئے دیگر ضروری کاغذات کے ساتھ ڈومیسائل اور انکم سرٹیفکیٹ کا پیش کیا جانا بھی ضروری ہے،  لیکن ہڑتال کی وجہ سے بہت  سے مستحقین اب تک انکم اور ڈومیسائل سرٹیفکیٹ حاصل کرنے سے قاصر رہے ہیں۔ صرف میرٹھ ضلع میں سیکڑوں کی تعداد میں اقلیتی طلبہ اس وجہ سے فارم داخل کرنے سے محروم ہیں۔  وہیں فارم داخل کرنے کی  آخری تاریخ میں چند روز ہی بچے ہونے سے مستحقین کے ساتھ اسکولوں کے منتظمین بھی پریشان ہیں ۔

Loading...

Loading...
Listen to the latest songs, only on JioSaavn.com