اب کیسی ہوگی راجیہ سبھا کی تصویر،کیا این ڈی اے کو ملے گی اکثریت

بھارتیہ جنتا پارٹی لوک سبھا کے ساتھ ہی راجیہ سبھا میں بڑی سب سے بڑی پارٹی بن چکی ہے۔حالانکہ مارچ میں 17 ریاستوں میں راجیہ سبھا کی 59 سیٹوں کیلئے ہونے جا رہے انتخابات کے بعد بھی وہ اکثریت سے کافی پیچھے رہے گی۔

Feb 26, 2018 11:15 PM IST | Updated on: Feb 26, 2018 11:15 PM IST
اب کیسی ہوگی راجیہ سبھا کی تصویر،کیا این ڈی اے کو ملے گی اکثریت

نئی دہلی۔بھارتیہ جنتا پارٹی لوک سبھا کے ساتھ ہی راجیہ سبھا میں بڑی سب سے بڑی پارٹی بن چکی ہے۔حالانکہ مارچ میں 17 ریاستوں میں راجیہ سبھا کی 59 سیٹوں کیلئے ہونے جا رہے انتخابات کے بعد بھی وہ اکثریت سے کافی پیچھے رہے گی۔اسے ضروری بل پاس کروانے کیلئے دوسری پارٹیوں کا سہارا لینا پڑیگا۔اپریل اور مئی میں خالی ہونے جا رہی ان سیٹوں پر 23مارچ کو ووٹنگ ہوگی۔

بتادیں کہ 245 ارکان والے اپر ہاؤ س میں ووٹنگ کیلئے 123 سیٹیں چائیں ۔جبکہ مارچ کے انتخابات کے بعد بھی بی جے پی صرف 73سیٹوں کے درمیان سمٹی رہے گی۔ابھی راجیہ سبھا میں این ڈی اے کے 83ممبر ہیں جبکہ بی جے پی کے 58 ممبر ہیں۔

Loading...

کمیشن کی جانب سے جاری اطلاع کے مطابق سب سے زیادہ یوپی کی 10سیٹوں پر انتخابات ہونے ہیں۔اس کے علاوہ بہار،مہاراشٹر کی چھ ۔چھ مدھیہ پردیش،مغربی بنگال کی پانچ۔پانچ،گجرات کی چار ۔چار،آندھرا پردیش ،تلنگانہ،اوڈیشہ،اور راجستھان کی تین۔تین ،جھارکھنڈ کی دو،چھتیس گڑھ ،ہماچل،ہریانہ اور اتراکھنڈ کی ایک ۔ایک سیٹ شامل ہے۔

Loading...