سپریم کورٹ کا موبائل نمبر کوآدھار سے جوڑنے سے متعلق نوٹیفکیشن کے خلاف عرضی پر فوری سماعت سے انکار

سپریم کورٹ نے موبائل نمبر کوآدھار سے لازمی طور سے جوڑنےسے متعلق نوٹیفکیشن کو چیلنج دینے والی درخواست کی فوری سماعت سے آج انکار کر دیا۔

Oct 27, 2017 01:19 PM IST | Updated on: Oct 27, 2017 01:19 PM IST
سپریم کورٹ کا موبائل نمبر کوآدھار سے جوڑنے سے متعلق نوٹیفکیشن کے خلاف عرضی پر فوری سماعت سے انکار

سپریم کورٹ آف انڈیا: فائل فوٹو، گیٹی امیجیز۔

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے موبائل نمبر کوآدھار سے لازمی طور سے جوڑنےسے متعلق نوٹیفکیشن کو چیلنج دینے والی درخواست کی فوری سماعت سے آج انکار کر دیا۔ جسٹس چیلمیشور اور جسٹس ایس عبدالنذیر کی بنچ نے کانگریس لیڈر تحسین پوناوالا کی عرضی کی فوری سماعت سے یہ کہتے ہوئے انکار کر دیا کہ آدھار سے متعلق کچھ کیسز چیف جسٹس دیپک مشرا کی بنچ کے سامنے زیر التوا ہیں۔

مسٹر پوناوالا نے ٹیلی کمیونیکیشن محکمہ کی طرف سے 23 مارچ کو جاری نوٹیفکیشن کو غیر آئینی قرار دیتے ہوئے منسوخ کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ جسٹس چیلمیشور نے مسٹر پوناوالا کے وکیل کو مشورہ دیا کہ وہ 30 اکتوبر کو اس وقت جسٹس مشرا کے سامنے کیس کا خاص طور سے ذکر کریں، جب وہ آدھار سے متعلق مختلف معاملات کی سماعت کر رہے ہوں گے۔

Loading...

Loading...