مذہبی تعلیمات کی روشنی میں سوشل میڈیا کےاستعمال اورمنفی اورمثبت اثرات پر سیمینار کا انعقاد

آج کی تیز رفتار زندگی میں جہاں دنیوی ضروریات دینی تعلیمات پرحاوی ہوتی جا رہی ہیں، اصلاح معاشرہ کیلئے وقتاً فوقتاً اصلاحی پروگراموں کے انعقاد کی ضرورت بھی محسوس کی جا رہی ہے۔

Jan 04, 2018 06:56 PM IST | Updated on: Jan 04, 2018 06:56 PM IST
مذہبی تعلیمات کی روشنی میں سوشل میڈیا کےاستعمال اورمنفی اورمثبت اثرات پر سیمینار کا انعقاد

میرٹھ کےمسلم نوجوانوں کی تنظیم شیعہ نکسس کے زیراہتمام میرٹھ میں ایک سمینار کا انعقاد کیا گیا۔

میرٹھ : طرز زندگی کو بہتراور خوشگوار بنانے کے لئےاصلاح معاشرہ کی اہمیت ہردور کی ضرورت رہی ہے ۔ آج کی تیز رفتار زندگی میں جہاں دنیوی ضروریات دینی تعلیمات پرحاوی ہوتی جا رہی ہیں، اصلاح معاشرہ کیلئے وقتاً فوقتاً اصلاحی پروگراموں کے انعقاد کی ضرورت بھی محسوس کی جا رہی ہے۔

آج کے عہد میں میڈیا اوربالخصوص سوشل میڈیا کی اہمیت اور طاقت سے انکار نہیں کیا جا سکتا، لیکن انفارمیشن ٹیکنالوجی کےاس دورمیں جہاں سوشل میڈیا کےفائدے ہیں تو نقصانات بھی بہت ہیں ۔ ایسے میں ضروری ہے کہ اس کے مضر اثرات اور نقصانات سے نئی نسل کو نہ صرف واقف کرایا جائے ، بلکہ بچایا بھی جائے ۔

اس سلسلہ میں میرٹھ کےمسلم نوجوانوں کی تنظیم شیعہ نکسس کے زیراہتمام میرٹھ میں ایک سمینار کا انعقاد کیا گیا۔ سوشل میڈیا کےاثرات کےعنوان سےمنعقدہ اس پروگرام میں شیعہ عالم دین نےشریعت کی روشنی میں سوشل میڈیا کےمنفی اور مثبت اثرات اور دینی و دنیوی مسائل سے متعلق سوالوں کا جواب دیا ۔ موجودہ ماحول میں اس طرح کے پروگراموں کوعالم دین نے وقت کی ضرورت قرار دیا۔

پروگرام میں شرکت کرنے والوں میں بڑی تعداد طلبہ اورطالبات کی تھی ۔ پروگرام کے آخر میں سوال و جواب سیشن میں نوجوانوں نے سوشل میڈیا کے استعمال اور دیگرمذہبی معاملات سے وابستہ مسائل سے متعلق سوالات پیش کرکے ان کا جواب حاصل کیا ۔

Loading...

Loading...