مظفرپوراوردیوریا جنسی استحصال معاملے پربولے اعظم خان "وزرائے اعلیٰ نے کرسی بچانے کے لئے گنگہاروں کوچھوٹ دے دی"۔

مظفرپوراوردیوریا میں لڑکیوں کے جنسی استحصال کے معاملے پرسماجوادی پارٹی کے قدآورلیڈراعظم خان نے بدھ کو بہار اوریوپی کی حکومتوں کوکٹہرے میں کھڑا کیا۔ انہوں نےکہا کہ قانون بہت کمزورہوگیا ہے۔

Aug 08, 2018 07:32 PM IST | Updated on: Aug 08, 2018 07:33 PM IST
مظفرپوراوردیوریا جنسی استحصال معاملے پربولے اعظم خان

سماجوادی پارٹی کے سینئر لیڈر اعظم خان: فائل فوٹو

مظفرپوراوردیوریا میں لڑکیوں کے جنسی استحصال کے معاملے پر سماجوادی پارٹی کے قدآورلیڈراعظم خان نے بدھ کو بہاراوریوپی کی حکومتوں کوکٹہرے میں کھڑا کیا۔ انہوں نے کہا کہ قانون بہت کمزورہوگیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ جو بندوں کے شکرگزارنہیں ہوتے، وہ اللہ کے بھی شکرگزارنہیں ہوتے۔ جو بندوں کودھوکہ دے سکتے ہیں، وہ اپنے مالک کو بھی دھوکہ  دے سکتے ہیں۔ اعظم خان نے رامپورمیں کہا کہ جنہوں نے سیاست میں عوام کو دھوکہ دیا، عوام سے کچھ کہا اورکام کچھ کیا۔ ووٹ کے لئے فاشزم کے خلاف فاشسٹ طاقتوں کےساتھ  حکومتیں بنا لیں۔

Loading...

بہارمیں تواس لئے اس پاپ (گناہ) کی سزا ہے۔ اس سے بڑا گناہ یہ ہے کہ یہاں (اترپردیش) اور بہار کے وزرائے اعلیٰ نے بھی اپنی گدی کو بچائے رکھنے کے لئے گناہ کرنے والوں کو کھلی چھوٹ دے دی۔ اعظم خان نے سوال کیا کہ اناو عصمت دری معاملہ کیا ہے؟ آج تک کس لئے کوئی موثرکارروائی نہیں ہوئی، کیونکہ اس میں پھنسے لوگ وزیراعلیٰ کے قریبی ہیں۔

اعظم خان نے کہا کہ بہارمیں کوئی کاروائی کیوں نہیں ہوئی؟ وہ اس لئے کیونکہ وزیراعلیٰ کے بغل میں بیٹھی خاتون اس گناہ سے منسلک وزیرہے۔ انہوں نے کہا کہ جب سماج اور معاشرے کو چلانے والے لوگ معاشرے کے ساتھ غیراخلاقی کام کریں گے تو نتیجے ایسے ہی آئیں گے۔

انہوں نے کہا کہ جب قانون کا راج ختم ہوجائے گا توجو قاتل ضمانت پرچھوٹیں گے، ان کے لئے جلوس نکلیں گے، ان کا احترام کیا جائے گا۔ اعظم خان نے کہا کہ قانون بہت کمزورہوگیا ہے، اسی وجہ سے سپریم کورٹ کو کہنا پڑا کہ لگتا ہے کہ لوگوں کے دلوں سے عدالت کا خوف ختم ہوگیا ہے۔ اس لئے کیونکہ عدالتوں کے فیصلے کو ریاست اورملک کی حکومت نے نافذ ہی نہیں کیا۔ انہوں نے کہا کہ یہ انارکی ہی ہے، "نو رول آف لا، نوجسٹس"۔

Loading...