اکھلیش یادوکا طنز، وزیراعظم اوروزیراعلیٰ کچھ کئےبغیردے رہے ہیں ایک دوسرے کومبارکباد

اکھلیش یادونے کہا کہ لکھنومیں بی جے پی کی اعلیٰ قیادت نےعوام کوگمراہ کرنےکے اپنے ہنرکا اچھا مظاہرہ کیا ہے۔

Jul 29, 2018 10:45 AM IST | Updated on: Jul 29, 2018 10:47 AM IST
اکھلیش یادوکا طنز، وزیراعظم اوروزیراعلیٰ کچھ کئےبغیردے رہے ہیں ایک دوسرے کومبارکباد

اکھلیش یادو۔ فائل فوٹو

وزیراعظم نریندرمودی کے لکھنودورہ کو لے کرسماجوادی پارٹی کے قومی صدراورسابق وزیراعلیٰ اترپردیش اکھلیش یادو نے تنقید کی ہے۔ اکھلیش نے کہا کہ لکھنو میں بی جے پی کی اعلیٰ قیادت نے عوام کو گمراہ کرنے کے اپنے ہنرکا اچھا مظاہرہ کیا ہے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ بی جے پی کا یہی چہرہ اورکردارہے کہ اسے کرنا کچھ نہیں ہے، لیکن سہرا جو نہیں کیا ہے اس کا بھی ضرور لینا ہے۔ ترقی کے نام پرجھوٹے اعدادوشمار پیش کرنے میں ان کو مہارت ہے۔

Loading...

اکھلیش یادو نے ساتھ ہی کہا ’’یہ کیسی بدقسمتی ہے کہ بغیرکچھ کئے وزیراعلیٰ کے ذریعہ وزیراعظم کی تعریف کی جاتی ہے اور وزیراعظم کے ذریعہ وزیراعلیٰ کو مبارکباد دی جاتی ہے۔ عوام حیران ہیں کہ ان کے مفاد میں کچھ نہیں کیا، تب بھی ایک دوسرے کی تعریف کی جاسکتی ہے۔

سابق وزیراعلیٰ نے کہا کہ وزیراعظم نے لکھنو کے ترقیاتی کاموں کا بہترین ہوائی خاکہ کھینچا، لیکن یہ بتانے میں انہیں کیوں جھجھک محسوس ہوئی کہ سماجوادی حکومت کے وقت ہی ریاست میں ترقی کو رفتارملی۔ راجدھانی کو خوبصورت بنایا گیا۔ لکھنو- آگرہ ایکسپریس وے جیسی شاندار 302 کلومیٹرکی سڑک بنی، جس پرایئرفورس کے طیارے اترے ہیں۔ گومتی ریورفرنٹ، جنیشورمشرا پارک بنے۔ بہترہوتا لکھنومیں میٹرو پربات کرتے ہوئے یہ بھی بتا دیتے کہ اس کی شروعات کس نےکی۔

اکھلیش یادو نے کہا کہ بی جے پی کے دوراقتدارمیں تو صحت، تعلیم، قانون انتظام ہرعلاقے میں حالت بدتر ہوئی ہے، کسانوں کی خودکشی اوربےکاری کی وجہ سے نوجوانوں کی بوکھلاہٹ بھی بی جے پی اقتدار کی دین ہے، اس کے بعد باہر سے سرمایہ کاری اوراسمارٹ سٹی کی باتیں بھی خوبصورت گمراہ کن ہوسکتی ہیں۔

Loading...