جب پربھو نے استقبال کے تام جھام سے بچنے کے لئے چلتی ٹرین سے ہی چھلانگ لگا دی

میرٹھ ۔ عام طور پر سیاستدانوں جیسی چکاچوند سے بچنے والے ریلوے کے وزیر سریش پربھو نے خوش آمدید سے بچنے کے لئے اس بار چلتی ٹرین سے ہی چھلانگ لگا دی۔

Jun 07, 2016 09:45 AM IST | Updated on: Jun 07, 2016 09:45 AM IST
جب پربھو نے استقبال کے تام جھام سے بچنے کے لئے چلتی ٹرین سے ہی چھلانگ لگا دی

میرٹھ ۔ عام طور پر سیاستدانوں جیسی چکاچوند سے بچنے والے ریلوے کے وزیر سریش پربھو نے خوش آمدید سے بچنے کے لئے اس بار چلتی ٹرین سے ہی چھلانگ لگا دی۔ پربھو میرٹھ ریلوے اسٹیشن پر غازی آباد-میرٹھ- سہارنپور لائن کی بجلی کاری کو عام لوگوں کے لئے وقف کرنے پہنچے تھے۔ ٹرین جیسے ہی پلیٹ فارم پر پہنچی، پربھو نے دور سے ہی استقبال کے انتظار میں کھڑے کارکنوں کو دیکھ لیا۔ کارکنوں کی استقبال نوازی پروگرام سے سامنا نہ ہو اس کے لئے پربھو پہلے ہی ٹرین سے اتر گئے۔ تاہم، اس وقت ٹرین دھیمی تھی۔

پربھو اس کے بعد براہ راست اسٹیج پر پہنچ گئے۔ تاہم کارکنان نہیں مانے اور اسٹیج پر پہنچ کر ان کا استقبال کیا۔ شہر اسٹیشن پر ریلوے کے وزیر سریش پربھو نے غازی آباد- میرٹھ- سہارنپور بجلی کاری ٹریک  سماج کو وقف کیا۔ اس دوران پربھونے اسکیلیٹر اور لفٹ کا سنگ بنیاد رکھا۔ پربھو نے کہا کہ یو پی اے حکومت نے جتنا کام دس سال میں کیا، اس سے کہیں زیادہ گزشتہ دو سال میں کیا گیا۔ یوپی ریلوے کی ترجیحات میں ہے۔ ریلوے نے دو سال میں اتر پردیش کو 4500 کروڑ روپے دیئے ہیں۔ وہیں ایسٹرن فریٹ کاریڈور کے لئے 8500 کروڑ کابینہ نے پاس کئے ہیں۔

Loading...

ریلوے کے وزیر سریش پربھو نے کہا کہ دو سال میں ہم نے ساٹھ سال کے برابر کام کرنے کی کوشش کی ہے۔ پربھو نے مرکزی حکومت کی حصولیابیوں کی جانکاری دیتے ہوئے بتایا کہ پہلے ہر دن چار کلومیٹر ریلوے لائن بچھتی تھی، جبکہ ہم نے 19 کلومیٹر روزانہ ریلوے لائن بچھانے کا کام شروع کیا ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ مغربی یوپی میں ضرورت کے مطابق نئی ٹرین ضرور چلے گی۔ ہم جلد ہی ہائی اسپیڈ اور سیمی اسپیڈ ٹرینیں لانے جا رہے ہیں۔

Loading...