اسمبلی انتخابات نتائج:تریپورہ میں بی جے پی نے منہدم کیا 25سال پرانہ قلعہ،اب نظر بنگال پر

تریپورہ میں بی جے پی کے نتائج تاریخی ہیں اس جیت نےمغربی بنگال میں بھی بی جے پی کیلئے راستے کھول دئے ہیں۔سی پی ایم کی تیزی سے گھٹتی مقبولیت کے چلتے بی جےپی مغربی بنگال میں ایک اپوزیشن کے طور پر ابھر رہی ہے۔

Mar 03, 2018 11:09 PM IST | Updated on: Mar 03, 2018 11:20 PM IST
اسمبلی انتخابات نتائج:تریپورہ میں بی جے پی نے منہدم کیا 25سال پرانہ قلعہ،اب نظر بنگال پر

بی جے پی نے تریپورہ میں 43 سیٹوں پر جیت حاصل کر لی ہے۔

نئی دہلی۔نئی دہلی۔بھارتیہ جنتا پارٹی تریپورہ اسمبلی انتخابات میں اس مرتبی سی پی ایم کے 25 سال پرانے قلعے کو منہدم کر کے صفر سے چوٹی تک پہنچ گئی ہے۔گزشتہ انتخابات میںبی جے پی کو تریپورہ میں ایک بھی سیٹ ھاصل نہیں ہوئی تھی،وہیں اس مرتبہ پارٹی نے 43 سیٹوں پر جیت حاصل کر لی ہے۔ڈھائی دہائی سے اقتدار پر قابض سی پی ایم کو محض 16 سیٹوں پر جیت ملی ہے۔کانگریس یہاں اب تک اپنا کھاتہ بھی نہیں کھو ل پائی ہے۔

تریپورہ میں بی جے پی کے نتائج تاریخی ہیں اس جیت نےمغربی بنگال میں بھی بی جے پی کیلئے راستے کھول دئے ہیں۔سی پی ایم کی تیزی سے گھٹتی مقبولیت کے چلتے بی جےپی مغربی بنگال میں ایک اپوزیشن کے طور پر ابھر رہی ہے۔

Loading...

حالانکہ ممتا بنرجی کے انتخاب کے طور پر اپنا مقام بنانے کیلئے پارٹی کو ابھی اور زیادہ محنت کرنے کی ضرورت ہے۔تریپورہ میں ملے مینڈیٹ سے مغربی بنگال اور اوڈیشہ کے بی جے پی کارکنان کا خود اعتماد بڑ رہا ہے۔

ہیمنت نے امت شاہ کے سر باندھا جیت کا سہرا

شمال مشرق میں بی جے پی کی اس شاندار کارکردگی کے کپتان مانے جا رہے ہیمنت بسو سرما نے اس کارکردگی کا سہرا پارٹی صدر امت شاہ پر باندھا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ـ" امت شاہ کے فیصلوں نے ان کی کافی مدد کی ۔پارٹی کے کئی لوگ یہاں اتحاد کرنا نہیں چاہتے تھے۔ان کا کہنا تھا کہ آئی پی ایف ٹی کے ساتھ گٹھ بندھن کرنا ہمارے لئے خودکش ہو سکتا ہے لیکن امت شاہ نے اس کی حمایت کی۔انہیں یقین تھےا کہ اس سے ہمیں اچھے نتیجے ملیں گے،،۔

شمال مشرق میں بی جے پی کی کارکردگی قومی اتحاد کے لئے اہم

وہیں شمال مشرق کے ان انتخابی رجحانوں پر بی جے پی لیڈر سبرا منیم سوامی نے کہا ہندوتوادی پارٹی کو مل رہی جیت بتاتی ہیکہ لوگ ہندستان کے ساتھ ملنا چاہتے ہیں۔سبرا منیم سوامی نے کہا'تریپورہ میں صفر سے حکومت بنانا ایک نئی تاریخ قائم کرنے جیسا ہوگا۔یہ جیت بتاتی ہیکہ لوگ ہندستان کے ساتھ ملنا چاہتے ہیں۔وہ خود کو ہندستانی کہنا پسند کرتے ہیں۔یہ قومی اتحاد کے لئے کافی اہم معنی رکھتا ہے'۔

"لیفٹ کو گہرائی سے سوچنا ہوگا"

وہیں اس انتخاب کو لیکر آر جے ڈی ترجمان منوج جھاں نے کہا کہ" شمال مشرق کی سیاست میں پیسے کا کھیل چلا ہے۔اگر مانک حکومت ہار گئے تو مطلب ہوگا کہ ایماندار حکومت ہار گئی۔وہیں عآپ لیڈر آشوتوش نے ٹویٹ کرکے کہا کہ بی جے پئ کی تری پورہ میں جیت بڑی بات ہے۔لیفٹ کو اپنی پرانی ذہنیت سے باہر نکل کر خود کو دوبارہ کھڑا کرنا ہوگا۔لیفٹ کو نئ سوچ اور نو جوان لیڈروں کو اب موقع دینا چاہئے"۔

Loading...