نشیلی دوا کھلا کرنابالغ لڑکی کی اسپتال میں کی اجتماعی عصمت دری ، ملزم گرفتار

پولیس کے مطابق پیر کو 17 سالہ متاثرہ اسپتال میں داخل ہوئی تھی اور پیر کی رات کو ہی اس کے ساتھ ریپ کے واقعے کو انجام دیا گیا۔

Oct 18, 2018 03:24 PM IST | Updated on: Oct 18, 2018 03:30 PM IST
نشیلی دوا کھلا کرنابالغ لڑکی کی اسپتال میں کی اجتماعی عصمت دری ، ملزم گرفتار

علامتی تصویر

یوپی کے باغپت میں واقع ایک اسپتال میں نابالغ لڑکی کے ساتھ اجتماعی عصمت دری کا معاملہ سامنے آیا ہے۔اس میں پولیس نے اسپتال کے وارڈ بوائے اور ایک میڈیکل طلبا کو گرفتار کیا ہے۔ پولیس کے مطابق پیر کو 17 سالہ متاثرہ اسپتال میں داخل ہوئی تھی اور پیر کی رات کو ہی اس کے ساتھ ریپ کے واقعے کو انجام دیا گیا۔

پولیس نے بتایا کہ جو سسٹر اسپتال میں متاثرہ کی دیکھ ریکھ کر رہی تھی وہ اس وقت بریک کیلئے باہر گئی تھی۔ موقع کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ملزم متاثرہ کے کچھ ٹیسٹ کروانے کے بہانے اسے ایمرجنسی روم میں لیکر گئے اور اس کے ساتھ ریپ کیا۔

Loading...

ملزموں کا نام جتنیدر اور دلشاد بتایا جا رہا ہے۔ پولیس کے مطابق دلشاد نے متاثرہ کو نشیلی دوا کا انجیکشن دیا اس کے بعد دونوں نے ایک ایک کر کے اس کا ریپ کیا۔ متاثرہ نے ہوش میں آنے کے بعد الارم بجایا جس کے بعد دو نوں وہاں سے فرار ہو گئے۔

اس کے بعد پولیس کو اس واقعے کی جانکاری دی گئی ۔ بغپت کے ایس پی نے بتایا کہ اس معاملے میں ایف آئی آر درج کر  لی گئی ہے۔ وہیں اس معاملے میں باغپت کے چیف میڈٰکل آفیسر سشما چندر نے بھی جانچ کے احکام دئے ہیں۔

Loading...