اترپردیش : یوگی حکومت کے ذریعہ بنائے گئے وقف رولس 2017 کو الہ آباد ہائی کورٹ میں کیا گیا چیلنج

اترپردیش حکومت کی طرف سے وقف ٹربیونل میں مداخلت اور اس میں ترمیم کے خلاف الہ آباد ہائی کورٹ میں ایک عرضی داخل کی گئی ہے ۔

Apr 23, 2018 07:22 PM IST | Updated on: Apr 23, 2018 07:22 PM IST
اترپردیش : یوگی حکومت کے ذریعہ بنائے گئے وقف رولس 2017 کو الہ آباد ہائی کورٹ میں کیا گیا چیلنج

الہ آباد ہائی کورٹ ۔ فائل فوٹو

الہ آباد : اترپردیش حکومت کی طرف سے وقف ٹربیونل میں مداخلت اور اس میں ترمیم کے خلاف الہ آباد ہائی کورٹ میں ایک عرضی داخل کی گئی ہے ۔عرضی میں ریاستی حکومت کی طرف سے وضع کئے گئے ’’ وقف رولس 2017 ‘‘ کو بھی چیلنج کیا گیا ہے ۔ریاستی حکومت کی طرف سے بنائے گئے نئے قوانین کے تحت وقف ٹربیونل میں کئی اہم ترمیمات کی گئی ہیں ۔

اب وقف ٹربیونل میں تین ممبران کی بجائے صرف دو ممبران ہوں گے ۔ساتھ ہی ساتھ ریاستی حکومت نے وقف ٹربیونل میں جج کی تقرری کا اختیار بھی اپنے پاس رکھنے کا فیصلہ کیاہے ۔وقف قوانین میں حکومت کی ان ترمیمات کے خلاف ہائی کورٹ میں عرضی داخل کی گئی ہے ۔عرضی گذار کے وکیل سید فرمان احمد نقوی کا کہنا ہے کہ حکومت اپنی طرف سے وقف قوانین میں کوئی ترمیم نہیں کر سکتی۔

Loading...

Loading...