سماجوادی پارٹی سربراہ اکھلیش یادو تک پہنچی غیرقانونی مائننگ کی آنچ ، سی بی آئی کرے گی جانچ

اترپردیش کے غیرقانونی مائننگ معاملہ کی جانچ اب سماجوادی پارٹی کے سربراہ اور سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو تک پہنچتی ہوئی نظر آرہی ہے۔ سی بی آئی ذرائع کا کہنا ہے کہ اترپردیش کے سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو کے خلاف بھی جانچ کی جائے گی ۔

Jan 05, 2019 07:11 PM IST | Updated on: Jan 05, 2019 07:11 PM IST
سماجوادی پارٹی سربراہ اکھلیش یادو تک پہنچی غیرقانونی مائننگ کی آنچ ، سی بی آئی کرے گی جانچ

سماجوادی پارٹی سربراہ اکھلیش یادو تک پہنچی غیرقانونی مائننگ کی آنچ ، سی بی آئی کرے گی جانچ

اترپردیش کے غیرقانونی مائننگ معاملہ کی جانچ اب سماجوادی پارٹی کے سربراہ اور سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو تک پہنچتی ہوئی نظر آرہی ہے۔ سی بی آئی ذرائع کا کہنا ہے کہ اترپردیش کے سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو کے خلاف بھی جانچ کی جائے گی ۔

بتادیں کہ سال 2012 سے 2013کے درمیان مائننگ کی وزارت اکھلیش یادو کے پاس ہی تھی ، جو اس وقت ریاست کے وزیر اعلی بھی تھے ۔ اکھلیش یادو کے ساتھ ساتھ اس مدت میں جتنے بھی وزیر تھے ، سبھی جانچ کے دائرے میں آئیں گے۔

اترپردیش کے ہمیر پور میں ہوئی غیر قانونی مائننگ کے معاملہ میں سی بی آئی نے ہفتہ کو اس وقت کی ڈی ایم بی چندرکلا کی لکھنو میں واقع رہائش گاہ پر چھاپہ مارا ۔ ٹیم نے گھر سے کئی اہم دستاویز ضبط کئے ہیں۔ سفایر اپارٹمنٹ کے فلیٹ نمبر 101 میں سی بی آئی کی ٹیم نے چھاپہ ماری کی۔

Loading...