مظفر نگر کی 23 سالہ لڑکی کی ہری دوار کے ایک ہوٹل میں اجتماعی آبروریزی ، کیس درج

متاثرہ لڑکی کی شکایت پر پولیس نے ملزمین کے خلاف آدرش منڈی میں کیس درج کرلیا ہے۔ پولیس واقعہ کی جانچ کررہی ہے۔

Sep 02, 2018 03:23 PM IST | Updated on: Sep 02, 2018 03:23 PM IST
مظفر نگر کی 23 سالہ لڑکی کی ہری دوار کے ایک ہوٹل میں اجتماعی آبروریزی ، کیس درج

علامتی تصویر

اترپردیش کے مظفر نگر ضلع میں اتوار کو 23 سالہ ایک لڑکی نے شاملی میں بھارتیہ کسان یونین ( بی کے یو ) کے یوتھ یونٹ کے صدر سمیت دو لوگوں پر ہری دوار کے ایک ہوٹل میں اس کی اجتماعی آبروریزی کا الزام لگایا ہے۔ متاثرہ لڑکی کی شکایت پر پولیس نے ملزمین کے خلاف آدرش منڈی میں کیس درج کرلیا ہے۔ پولیس واقعہ کی جانچ کررہی ہے۔ وہیں پولیس نے متاثرہ خاتون کو میڈیکل ٹیسٹ کیلئے ضلع اسپتال بھیج دیا ہے۔

متاثرہ کی شکایت کی بنیاد پر ایک افسر اشوک کمار نے بتایا کہ خاتون کو اس کے والد کا علاج کرانے کی لالچ دے کر ہوٹل لایا گیا تھا ۔ کمار نے بتایا کہ متاثرہ لڑکی نے الزام عائد کیا ہے کہ اس کو ایک کار سے لایا گیا اور ضلع بھارتیہ کسان یونین یوتھ یونٹ کے سربراہ ونود نروال اور اس کے دوست نے اس کی اجتماعی آبروریزی کی۔

انہوں نے بتایا کہ خاتون کو میڈیکل جانچ کیلئے بھیج دیا گیا ہے۔ واقعہ کے بعد سے ملزمین فرار ہیں۔ پولیس ملزمین کی تلاش میں چھاپہ ماری کررہی ہے۔ پولیس متاثرہ خاتون کا کورٹ میں 164 کے تحت بیان درج کروانے کی بھی تیاری کررہی ہے۔

Loading...

Loading...