زمین ایکوائرکرکے اجودھیا میں رام مندرکی تعمیرکی جائے: بابا رام دیو نے بھی چھوڑا شگوفہ

رام دیونے کہا کہ رام مندرتعمیرکے دوہی متبادل ہیں۔ یا توپارلیمنٹ قانون بنائے یا لوگ پھرخود مندرتعمیرکریں۔ تاہم قانون ہاتھ میں نہ لیا جائے، اس لئے پارلیمنٹ کو قانون بنانا چاہئے۔

Nov 25, 2018 01:22 PM IST | Updated on: Nov 25, 2018 01:22 PM IST
زمین ایکوائرکرکے اجودھیا میں رام مندرکی تعمیرکی جائے: بابا رام دیو نے بھی چھوڑا شگوفہ

یوگ گرو بابا رام دیو: فائل فوٹو

اجودھیا میں رام مندرتعمیرکولے کراتوارکو وشوہندو پریشد (وی ایچ پی) نے دھرم سبھا کا انعقاد کیا ہے۔ شیو سینا نے بھی اس پرایک تقریب منعقد کی ہے۔ اس درمیان یوگ گرو بابا رام دیونے بڑا بیان دیتے ہوئے رام مندرتعمیرکی وکالت کی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ زمین ایکوائرکرکے رام مندرکی تعمیرہونی چاہئے۔

ہفتہ کو پتنجلی گروکل میں منعقدہ تقریب کے بعد نامہ نگاروں سے بات چیت میں بابا رام دیو نے کہا کہ رام مندرتعمیرکے دوہی متبادل ہیں۔ یا توپارلیمنٹ قانون بنائے یا لوگ پھرخود مندرتعمیرکریں۔ اگرلوگ خود مندرتعمیرکریں گے توکہا جائے گا کہ قانون ہاتھ میں لیاجارہا ہے۔ اس سے ملک میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی بگڑنے کا بھی خدشہ ہے، ایسے میں سب سے بہترمتبادل قانون ہے۔

Loading...

بابا رام دیو نے کہا کہ"حکومت جیسے سڑک، کالج، ایئرپورٹ کے لئے اراضی ایکوائرکرتی ہے، اسی طرح سے رام مندرکی تعمیرکولےکربھی زمین ایکوائرکرکے اسے رام مندرٹرسٹ کوسونپ دی جانی چاہئے۔ ٹرسٹ میں ہندواورمسلم دونوں کی نمائندگی ہونی چاہئے۔

رام دیونے یہ بھی کہا کہ لوگ بی جے پی یا نریندرمودی کی مخالفت کرسکتے ہیں، لیکن رام کی وطن میں کوئی مخالفت نہیں ہے۔ کیونکہ شری رام توہم سبھی کے ہیں۔ یہ زمین نہیں ضمیرسے جڑا معاملہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ عدالت کے فیصلے کی تاخیرسے لوگوں کے صبرکا پیمانہ لبریزہورہا ہے۔ ہم چاہتے ہیں کہ ہم آہنگی بنی رہے۔ اس کے لئے قانون ہی واحد ذریعہ ہے۔  محب وطن اوررام بھکت نریندرمودی کومندرتعمیرکولے کرقانون لانے میں تاخیرنہیں کرنی چاہئے۔ کیونکہ جمہوریت میں پارلیمنٹ سے بڑا کوئی مندرنہیں ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   بی جے پی نے نہیں ’شیو سینا‘ نے گرایا تھا بابری مسجد کا ڈھانچہ: اعظم خان

یہ بھی پڑھیں:   اجودھیا معاملہ: وہ چاہتے ہیں کہ ان کے بیان پربولیں تاکہ تنازعہ کھڑا کرنے کا موقع ملے: مسلم مذہبی رہنما

Loading...