اترپردیش : سلاٹر ہاوس سے متعلق یوگی حکومت کے آرڈیننس کو ہائی کورٹ میں چیلنج کرنے کا فیصلہ

اترپردیش میں سلاٹر ہاؤس کی قانونی لڑائی اب اور طویل ہوتی جا رہی ہے ۔جہاں ایک طرف ریاستی حکومت نے سلاٹر ہاؤس پر پابندی کو مستقل کرنے کیلئے آر ڈیننس جا ری کیا ہے ۔

May 06, 2018 01:52 PM IST | Updated on: May 06, 2018 01:52 PM IST
اترپردیش : سلاٹر ہاوس سے متعلق یوگی حکومت کے آرڈیننس کو ہائی کورٹ میں چیلنج کرنے کا فیصلہ

file photo

الہ آباد : اترپردیش میں سلاٹر ہاؤس کی قانونی لڑائی اب اور طویل ہوتی جا رہی ہے ۔جہاں ایک طرف ریاستی حکومت نے سلاٹر ہاؤس پر پابندی کو مستقل کرنے کیلئے آر ڈیننس جا ری کیا ہے ۔وہیں دوسری جانب سلاٹر ہاؤس کی باز یابی کی لڑائی لڑنے والی تنظیموں نے حکومت کے اس آرڈیننس کو ہائی کورٹ میں چیلنج کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

ریاستی حکومت کی جانب سے جاری آر ڈیننس کے مطابق بلدیہ اور نگر پنچایت سے سلاٹر ہاؤس چلانے کے اختیارات واپس لے لئے گئے ہیں ۔ہائی کورٹ میں عرضی گذاروں کے وکیل فرمان نقوی کا کہنا ہے کہ ریاستی حکومت کی طرف سے جاری آر ڈیننس میں کئی قانونی خامیاں موجود ہیں۔

نئے آر ڈیننس کے مطابق اب سلاٹر کو کھولنے اور اس کو چلانے کے لئے ریاستی حکومت سے لائسنس لینا ہوگا ۔سلاٹر ہاؤس کی بازیابی کے لئے قانونی لرائی لڑ نے والے افراد کا کہنا ہے کہ ریاستی حکومت بلدیہ اور نگر پنچایت کے اختیارات کو نہیں چھین سکتی۔

خیال رہے کہ وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ اپنے عوامی جلسوں میں پہلے ہی واضح کر چکے ہیں کہ سلاٹر ہاؤس پر لگی پابندی کو اب نہیں ہٹایا جائے گا ۔اس سلسلے میں یوگی حکومت نے آر ڈیننس جاری کرکے ایک طرح سے اپنے فیصلے پر آخری مہر لگا دی ہے ۔لیکن سلاٹر ہاؤس کی قانونی لڑائی لڑنے والے افراد کو امید ہے کہ ہائی کورٹ سے ان کو انصاف ضرور ملے گا۔

Loading...

مشتاق عامر کی رپورٹ

Loading...