سینئر نے خاتون آئی اے ایس افسر سے کی گندی بات ، کہا : نئی نویلی دلہن کی طرح سب کچھ سمجھانا پڑے گا

ہریانہ حکومت میں تعینات ایک خاتون آئی اے ایس افسر نے اپنے سینئر افسر پر جنسی استحصال کا الزام عائد کیا ہے۔

Jun 10, 2018 10:31 PM IST | Updated on: Jun 10, 2018 10:31 PM IST
سینئر نے خاتون آئی اے ایس افسر سے کی گندی بات ، کہا : نئی نویلی دلہن کی طرح سب کچھ سمجھانا پڑے گا

علامتی تصویر

ہریانہ حکومت میں تعینات ایک خاتون آئی اے ایس افسر نے اپنے سینئر افسر پر جنسی استحصال کا الزام عائد کیا ہے۔ خاتون آئی اے ایس افسر نے اتوار کو فیس بک پوسٹ لکھ کر اپنے ساتھ پیش آئے واقعہ کا انکشاف کیا ۔ 28 سالہ آئی اے ایس افسر نے الزام لگایا کہ "انہوں نے مجھ سے کہا کہ انہیں ایک نئی نویلی دلہن کی سمجھانا پڑے گا اور وہ مجھے اسی طرح سے سمجھا رہے ہیں ۔ مجھے ان کا رویہ غیر اخلاقی لگا"۔

فیس بک پوسٹ کے مطابق وہ صدر جمہوریہ کے دفتر اور حکومت ہند کو کل 53 مرتبہ شکایتی میل کرچکی ہیں ، لیکن اب تک کوئی بھی ایکشن نہیں لیا گیاہے۔ حالانکہ خاتون افسر کے سینئر افسر نے سبھی الزامات کو خارج کردیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ خاتون افسر کو صرف مشورہ دیا گیا تھا کہ دیگر افسروں کے ذریعہ پاس کی جاچکی فائلوں میں غلطیاں نہ نکالیں۔

خاتون افسر نے اتوار کو فیس بک پوسٹ کے ذریعہ پورے واقعہ کا تذکرہ کیا۔ خاتون افسر نے لکھا کہ ان کے باس نے انہیں 22 مئی کو اپنے دفتر میں بلایا اور وارننگ دی ۔ خاتون افسر کے مطابق انہوں نے مجھ سے سوال کیا کہ میں فائلوں پر یہ کیوں لکھ رہی ہوں کہ محکمہ نے غلط کیا ہے۔

خاتون افسر کے مطابق سینئر افسر نے مبینہ طور پر دھمکی دی کہ اگر انہوں نے فائلوں پر خلاف تبصرہ لکھنا بند نہیں کیا تو ان کی سالانہ سکریٹ رپورٹ اے سی آر کو خراب کردیا جائے گا۔ خاتون افسر کے مطابق سینئر افسر نے انہیں 31 مئی کو بلایا ، پھر اپنے اسٹاف کو ہدایت دی کہ وہ کسی کو ان کے کمرے میں نہیں آنے دیں ۔ خاتون افسر نے الزام لگایا کہ سینئر سے مجھ سے پوچھا کہ میں کس طرح کا کام کرنا چاہتی ہوں ، محکمہ جاتی کام یا ٹائم پاس کام چاہتی ہوں ... اور پھر انہوں نے مجھ سے فائلوں پر خلاف تبصرہ نہیں لکھنے کیلئے کہا ۔

Loading...

خاتون افسر نے دعوی کیا کہ 6 جون کو سینئر افسر نے انہیں شام پانج بجے اپنے دفتر میں بلایا اور شام 7:39 بجے تک وہیں رہنے کیلئے کہا۔

خاتون افسر کے مطابق میں ڈیسک کی دوسری طرح ان کے سامنے بیٹھی تھی ، انہوں نے مجھ سے کہا کہ ان کی کرسی کے نزدیک آوں ، جب میں ڈیسک کی دوسری طرف پہنچی تو انہوں نے مجھ سے کمپیوٹر چلانا سکھانے کا دکھاوا کیا ، میں اپنی کرسی پر واپس چلی گئی تو کچھ دیر بعد وہ کھڑے ہوئے اور کوئی کاغذ ڈھونڈتے ہوئے میری کرسی کے نزدیک آئے اور کرسی کو دھکا دیا۔

خاتون افسر نے الزام لگایا ہے کہ سینئر سمیت ان کے کچھ ساتھی اب انہیں دھمکی دے رہے ہیں۔ انہوں نے دعوی کیا کہ دیگر سینئر خاتون افسروں نے انہیں زبانی حکم دئے ہیں کہ میں کوئی تحریری شکایت نہیں کروں۔

Loading...