تیس کی عمر کے بعد ہونے والی اس کمی کو دور کریں گی یہ چیزیں: جاننا بیحد ضروری

تیس سال کی عمر کے بعد دودھ اور دودھ سے بنی اشیا کو بھی اپنے کھانے میں شامل کرنا چاہئے۔ دہی، پنیر چیز، گھی کا استعمال کرنا جسم کیلئے اچھا ہوتا ہے۔ یہ سبھی چیزیں جسم میں کیلشیم کی کمی کو پورا کرتی ہیں اور ہڈیوں کو مضبوط رکھتی ہیں۔

Sep 10, 2019 12:11 PM IST | Updated on: Sep 10, 2019 12:11 PM IST
تیس کی عمر کے بعد ہونے والی اس کمی کو دور کریں گی یہ چیزیں: جاننا بیحد ضروری

تیس کی عمر کے بعد ہونے والی اس کمی کو دور کریں گی یہ چیزیں

تیس کی عمر کے پار کرتے ہی خواتین کو صحت اور ہڈیوں کو مضبوط بنانے کیلئے ضروری غذائی اجناس کا استعمال باقاعدہ  طور پر کرنا چاہئے۔ غذائیت کی کمی کی وجہ سے ان میں ہڈیوں سے متعلق بہت ساری پریشانیاں ہونے لگتی ہیں۔  اس کی سب سے بڑی وجہ کیلشیم کی کمی ہے۔

اگر آپ کے جسم میں، ہاتھ اور پاؤں میں درد، ناخون کا ٹوٹنا یا دانتوں میں درد ہوتا ہے تو اپنی غذا میں کیلشیم سے بھرپور خوراک شامل کریں۔ ان چیزوں کو کھانے سے آپ کے جسم میں کیلشیم کی کمی کو دور کرنے میں مدد ملے گی۔ آئیے جانتے ہیں وہ کون سی کھانے کی اشیاء ہیں جو آپ کے جسم میں کیلشیم کی کمی کو پورا کریں گی۔

دودھ  اور  دودھ  سے  بنی  اشیاء

تیس  سال کی عمر کے بعد دودھ اور دودھ سے بنی اشیا کو بھی اپنے کھانے میں شامل کرنا چاہئے۔ دہی، پنیر چیز، گھی کا استعمال کرنا جسم کیلئے اچھا ہوتا ہے۔ یہ سبھی چیزیں جسم میں کیلشیم کی کمی کو پورا کرتی ہیں اور ہڈیوں کو مضبوط رکھتی ہیں۔

Loading...

ڈرائی فروٹس

اپنی غذا میں کاجو ، کشمش ، بادام ، پستہ ، اخروٹ جیسی اشیا شامل کریں۔ یہ سب موٹاپے میں اضافہ نہیں کرتے ہیں، لیکن ان سے جسم کو کافی مقدار میں کیلشیم ملتا ہے۔ اس کے علاوہ وہ جسم کو توانائی (اینرجی) بھی دیتے ہیں۔

ہری سبزیاں اور پھل

کھانے میں زیادہ سے زیادہ ہری سبزیاں اور پھلوں کا استعمال کرنا چاہئے۔ کیلشیم کی کمی کو دور کرنے کیلئے ہری سبزیاں جیسے پالک ، گوبھی ، ہرا دھنیا کھائیں۔ پھل ، سنترا ، اننناس ، کیلے ، شہتوت ، کھجور میں کیلشیم کی مقدار زیادہ ہوتی ہے۔ روزانہ ان  پھلوں کا استعمال کریں۔

तीस की उम्र के बाद कैल्शियम की कमी को दूर करेंगी ये चीजें, आज ही खाना शुरू करें

Loading...