ہندوستانی فضائیہ کے لاپتہ طیارہ کا اب ہائی ریزولیشن سٹلائٹ کی تصاویر کے ذریعہ پتہ لگانے کی کوشش

اس افسوسناک واقعہ کے بعد ان کے گھر والے ہندوستانی فضائیہ سے ربط میں ہے اور ان کی محفوظ طور پر واپسی کیلئے پریشان ہیں ۔ ساتھ ہی تلاشی مہم کے بارے میں اطلاعات کا بے چینی سے انتظار کیا جارہا ہے ۔ اسی دوران مقامی سیاسی لیڈروں نے ان افراد کے مکانات پہونچ کر ارکان خاندان کو دلاسہ دیا ۔

Jul 24, 2016 01:33 PM IST | Updated on: Jul 24, 2016 01:33 PM IST
ہندوستانی فضائیہ کے لاپتہ طیارہ کا اب ہائی ریزولیشن سٹلائٹ کی تصاویر کے ذریعہ پتہ لگانے کی کوشش

پورٹ بلیر : ہندوستانی فضائیہ کے لاپتہ طیارہ کااب تک کوئی سراغ نہیں ملاہے۔خلیج بنگال میں طیارہ کا تلاش جاری ہے۔ اس طیارہ کیلئے بحریہ اور فضائیہ کے جہاز تلاشی مہم میں لگے ہوئے ہیں ۔

اس کی تلاش کیلئے ہندوستانی خلائی تحقیقی ادارہ (اسرو) کی مدد حاصل کی جارہی ہے ۔ ہائی ریزولیشن سٹلائٹ کی تصاویر کے ذریعہ اس کا پتہ لگانے کی کوشش کی جارہی ہے ۔ تاہم اب تک اس کا کوئی پتہ نہیں چل سکا ۔ تلاش آپریشن میں چاربحری جہاز بھی مصروف ہیں۔اس طیارے میں 29فوجی جوان سوارتھے۔یہ طیارہ ہفتہ وار پروازپرتھا۔

طیارہ میں لاپتہ آندھراپردیش کے وشاکھا پٹنم سے تعلق رکھنے والے فوجیوں کے ارکان خاندان ابھی بھی پریشان ہیں جو اپنے ان رشتہ داروں کی محفوظ طور پر واپسی کی خوش خبری کیلئے بے چین ہیں کیونکہ تاحال اس لاپتہ طیارہ کے ملبہ کا ہنوز اتہ پتہ نہیں چل سکا ۔ ان فوجیوں کے لاپتہ ہونے کی اطلاع پر ان کے گھروں میں فکرمندی کے احساسات پائے جاتے ہیں ۔

اس افسوسناک واقعہ کے بعد ان کے گھر والے ہندوستانی فضائیہ سے ربط میں ہے اور ان کی محفوظ طور پر واپسی کیلئے پریشان ہیں ۔ ساتھ ہی تلاشی مہم کے بارے میں اطلاعات کا بے چینی سے انتظار کیا جارہا ہے ۔ اسی دوران مقامی سیاسی لیڈروں نے ان افراد کے مکانات پہونچ کر ارکان خاندان کو دلاسہ دیا ۔

Loading...

Loading...