உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    آئی پی ایل فائنل دیکھتے دیکھتے ہندوستان کے سابق کپتان کا 29 سال کے عمر میں حرکت قلب بند ہوجانے سے انتقال

    آئی پی ایل فائنل دیکھتے دیکھتے ہندوستان کے سابق کپتان کا حرکت قلب بند ہوجانے سے انتقال

    آئی پی ایل فائنل دیکھتے دیکھتے ہندوستان کے سابق کپتان کا حرکت قلب بند ہوجانے سے انتقال

    ہندوستان کی انڈر-19 ٹیم کے سابق کپتان اور سوراشٹر کے وکٹ کیپر بلے باز اوی بروٹ (Avi Barot Death) کا جمعہ کی شب دل کا دورہ پڑنے سے انتقال ہوگیا تھا۔ وہ صرف 29 سال کے ہی تھے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: ہندوستان کی انڈر-19 ٹیم کے سابق کپتان اور سوراشٹر کے وکٹ کیپر بلے باز اوی بروٹ (Avi Barot Death) کا جمعہ کی شب دل کا دورہ پڑنے سے انتقال ہوگیا تھا۔ وہ صرف 29 سال کے ہی تھے۔ دراصل، اوی بروٹ جمعہ کی رات احمد آباد میں اپنے گھر میں چنئی سپرکنگس اور کولکاتا نائٹ رائیڈرس کے درمیان ہو رہے آئی پی ایل 2021 (IPL 2021 Final) کا فائنل مقابلہ دیکھ رہے تھے۔ اسی وقت ان کو دل کا دورہ پڑا۔ جب تک لوگ انہیں اسپتال لے جاتے، تب تک ان کی موت ہوگئی۔ اوی بروٹ نے 5 دن پہلے ہی 43 گیندوں میں 72 رنوں کی اننگ کھیل کر سوراشٹر کو ریلائنس جی-1 ٹی-20 ٹورنامنٹ کا خطاب جتایا تھا۔ اوی بروٹ کی فیملی میں ان کی ماں اور اہلیہ ہیں۔

      سوراشٹر کرکٹ ایسوسی ایشن نے ایک بیان جاری کرکے 29 سال کے اوی کی موت کی اطلاع دی تھی۔ ایس سی اے نے اپنے بیان میں کہا تھا کہ ہم سبھی سوراشٹر کے شاندار کرکٹر اوی بروٹ کے بے وقت موت سے مایوس ہیں۔ اوی نے اسی سال سید مشتاق علی ٹرافی میں شاندار سنچری بھی لگائی تھی۔ اس کے علاوہ اوی بروٹ 20-2019 میں رنجی ٹرافی کا خطاب جیتنے والی سوراشٹر کی فاتح ٹیم کا بھی حصہ رہے تھے۔ تب راج کوٹ میں ہوئے فائنل میں سوراشٹر نے بنگال کو شکست دی تھی۔ وہیں اسی سال بروٹ نے سید مشتاق علی ٹی-20 ٹورنا منٹ میں 53 گیندوں میں 122 رن کی اننگ کھیل کر سرخیاں بٹوری تھیں، جس میں 11 چوکے اور 7 چھکے شامل تھے۔

      اونی بروٹ نے 2011 میں فرسٹ کلاس کرکٹ میں ڈیبیو کیا تھا

      احمد آباد کے باشندہ، بروٹ نے 2011 میں گجرات کی طرف سے فرسٹ کلاس کرکٹ میں ڈیبیو کیا تھا۔ اسی سال، انہیں ہندوستان کی انڈر-19 ٹیم کا کپتان مقرر کیا گیا تھا۔ گجرات سے، وہ ہریانہ رنجی ٹیم میں چلے گئے تھے، لیکن آخر میں گجرات واپس چلے آئے اور 17-2016 سیشن میں سوراشٹر کی رنجی ٹیم میں شامل ہوگئے۔ تب سے وہ سوراشٹر کے لئے بطور وکٹ کیپر اور اوپننگ بلے باز کھیل رہے تھے۔

      بروٹ نے اسی سال واحد ٹی-20 سنچری لگائی تھی

      اوی بروٹ نے 38 فرسٹ کلاس میچ میں ایک سنچری اور 9 نصف سنچری کی مدد سے 1547 رن بنائے۔ وہیں 38 لسٹ اے میچ میں اس وکٹ کیپر بلے باز نے 8 نصف سنچری کی بدولت 1030 رن بنائے تھے۔ بروٹ ٹی-20 کرکٹ کے طوفانی کھلاڑی تھے۔ انہوں نے گھریلو ٹی-20 میں ایک سنچری اور پانچ نصف سنچری کی مدد سے 717 رن بنائے تھے۔ ٹی-20 میں ان کا اسٹرائیک ریٹ 146 اور اوسط تقریباً 38 کا تھا۔ وہیں، وہ ضرورت پڑنے پر آفربیک گیند بازی بھی کرلیا کرتے تھے۔ انہوں نے تینوں فارمیٹ میں کل 11 وکٹ لئے تھے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: