உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Neeraj Chopra: نیرج چوپڑا نے رقم کی تاریخ، 2022 ورلڈ ایتھلیٹکس چیمپئن شپ میں کامیابی

    چوپڑا نے 2020 کے ٹوکیو اولمپکس میں طلائی تمغہ جیتا تھا

    چوپڑا نے 2020 کے ٹوکیو اولمپکس میں طلائی تمغہ جیتا تھا

    چوپڑا نے 2020 کے ٹوکیو اولمپکس میں طلائی تمغہ جیتا تھا اور پچھلے سال سمر گیمز میں ٹریک اینڈ فیلڈ ایونٹ میں پیلا دھات جیتنے والے پہلے ہندوستانی بن گئے تھے۔ اس کے علاوہ انھوں نے سی ڈبلیو جی (CWG) 2018، ایشین گیمز (2018) اور یو۔20 ورلڈ جونیئر چیمپئن شپ (2016) میں بھی گولڈ جیتا ہے۔

    • Share this:
      ہندوستان کے نیرج چوپڑا (Neeraj Chopra) نے اتوار کے روز عالمی ایتھلیٹکس چیمپئن شپ (World Athletics Championships in Oregon) میں مردوں کے جیولن تھرو (javelin throw) مقابلے میں تمغہ جیتنے والے اپنے ملک کے پہلے کھلاڑی بن کر تاریخ رقم کی۔ چوپڑا نے 88.13m کی بہترین تھرو کے ساتھ اوریگون (USA) میں جاری 2022 ورلڈ ایتھلیٹکس چیمپئن شپ میں چاندی کا تمغہ اپنے نام کیا۔

      اس طرح 24 سالہ انجو بوبی جارج (Anju Bobby George) کے بعد عالمی ایتھلیٹکس چیمپئن شپ میں تمغہ جیتنے والی دوسری ہندوستانی بن گئی۔ انجو نے 2003 پیرس ورلڈز میں لمبی چھلانگ کا کانسی کا تمغہ جیتا تھا۔ اینڈرسن پیٹرز (Anderson Peters) نے 90.54 میٹر کی شاندار کوشش کے ساتھ اپنے ٹائٹل کا دفاع کرتے ہوئے طلائی تمغہ جیت لیا جبکہ جیکب وڈلیچ نے 88.09 میٹر کی تھرو کے ساتھ کانسی کا تمغہ حاصل کیا۔

      چوپڑا نے 2020 کے ٹوکیو اولمپکس میں طلائی تمغہ جیتا تھا اور پچھلے سال سمر گیمز میں ٹریک اینڈ فیلڈ ایونٹ میں پیلا دھات جیتنے والے پہلے ہندوستانی بن گئے تھے۔ اس کے علاوہ انھوں نے سی ڈبلیو جی (CWG) 2018، ایشین گیمز (2018) اور یو۔20 ورلڈ جونیئر چیمپئن شپ (2016) میں بھی گولڈ جیتا ہے۔

      چوپڑا کی پہلی کوشش فاؤل تھی یہاں تک کہ ان کے حریف اور گولڈ میڈل کے دعویدار گریناڈا کے اینڈرسن پیٹرس نے ٹاپ پر جانے کے لیے 90.21 کا تھرو ریکارڈ کیا۔ چوپڑا کی دوسری کوشش کا نتیجہ 82.39 میں نکلا اور وہ 86.37 کے تھرو کے ساتھ فاصلے پر بہتری لاتے رہے حالانکہ ان کے تاثرات سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ وہ اس نتیجے سے خوش نہیں ہیں۔ اس تھرو نے اسے چوتھے نمبر پر پہنچا دیا۔

      پیٹرز نے اپنی دوسری کوشش میں 90.46 میٹر کے اس سے بھی بہتر تھرو کے ساتھ بینچ مارک قائم کیا جبکہ جمہوریہ چیک کے جیکب وڈلیچ نے 85.52 میٹر کے ساتھ آغاز کیا اور اسے 87.23 میٹر اور پھر 88.09 تک اپنی تیسری کوشش میں تین کوششوں کے بعد دوسرے نمبر پر پہنچا دیا۔ جب کہ دوسروں نے اپنے نمبروں کو بہتر کیا، جولین ویبر نے حیران کن طور پر 86.86m کے ساتھ آغاز کرنے کے بعد اپنی دوسری کوشش میں 71.88m تھرو کے ساتھ اختتام کیا۔

      چوپڑا پھر اپنی چوتھی کوشش کے بعد دوسرے نمبر پر آگئے جس کے نتیجے میں وہ 88.13 میٹر کا تھرو بنا اور اس بار ہندوستانی کافی خوش نظر آئے، یہاں تک کہ چاندی کے تمغے کی پوزیشن میں آنے کے بعد کیمرے کو فتح کا نشان بھی دکھاتے رہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: