ہوم » نیوز » اسپورٹس

راشد خان نےبلے سےمچایا کہرام، صرف 6 گیندوں میں بنالئے30 رن، پھربھی تین رن دور رہ گئی جیت

بگ بیش لیگ میں راشد خان نےگیند کےساتھ بلے سے بھی زبردست کارکردگی کی ہے۔

  • Share this:
راشد خان نےبلے سےمچایا کہرام، صرف 6 گیندوں میں بنالئے30 رن، پھربھی تین رن دور رہ گئی جیت
راشد خان نے بگ بیش لیگ میں بلے سے مچایا کہرام

ایڈیلیڈ: افغانستان کےنوجوان کھلاڑی راشد خان اپنی گیند بازی کو لےکردنیائے کرکٹ میں بہت مشہورہیں، لیکن اس سابق کپتان کے بلے نے بھی آسریلیا کی بگ بیش لیگ میں کم کہرام نہیں مچا رکھا ہے۔ گزشتہ میچ میں سے16 گیندوں پر26 رن بنانے والے راشد خان نےبگ بیش لیگ میں اپنی بلےبازی سےایک بارپھرکہرام مچادیا۔ حالانکہ وہ سڈنی تھنڈرکےخلاف کھیلےگئےاس مقابلےمیں اپنی ٹیم ایڈیلیڈ اسٹرائیکرس کوتین رن کی قریبی شکست سے نہیں بچا سکے، لیکن اچانک انہوں نے اپوزیشن ٹیم کی سانسیں روک ہی دی تھیں۔ راشد خان نے 18 گیندوں پر40 رن کی اننگ کھیلی، جن میں تین چوکےاورتین چھکے بھی شامل رہے۔ انہوں نےاپنے30 رن تومحض 6 گیندوں پرہی بنا لئےتھے۔




کیل فرگیوسن نے محض 46 گیندوں پربنا دیئے 73 رن

اس مقابلےمیں سڈنی تھنڈرنے پہلےکھیلتےہوئے 5  وکٹ کے نقصان پر168 رن بنائے۔ اس میں آسٹریلیائی سلامی بلے بازعثمان خواجہ نے50 گیندوں پر63 رنوں کا تعاون دیا۔ اس اننگ میں انہوں نےایک چھکےکےعلاوہ 6 چوکے بھی لگائے۔ خواجہ کےعلاوہ سڈنی تھنڈر کے کپتان کیلم فرگیوسن نے 46 گیندوں پر73 رنوں کی جارحانہ بلے بازی کی۔ اس دوران انہوں نے7 چوکےاوردوچھکےبھی لگائے۔ ٹیم کےلئے جس تیسرے بلے بازنےڈبل پوائنٹ میں داخل کیا، وہ ایلیس راس رہے، جنہوں نے15 گیندوں پر19 رن بنائے۔ ان کےعلاوہ ٹیم کا کوئی بھی بلےبازاہم تعاون نہیں دے سکا۔ ایڈیلیڈ اسٹرائیکرس کی طرف سے دودن پہلے ہی بین الاقوامی کرکٹ سے ریٹائرمنٹ لے چکےتیزگیند بازپیٹرسڈل نے 30 رن دے کردو وکٹ لئے۔



راشد خان کےآنےکے بعد بدلا گیا کھیل

جواب میں ایڈیلیڈ اسٹرائیکرس کی شروعات بے حد خراب رہی اور دوسرے ہی اوورمیں اوپنر سالٹ آؤٹ ہوگئے۔ وہ کھاتہ تک نہیں کھول سکے۔ حالانکہ اوپنرویدرفیلڈ نےایک اینڈ پکڑ کر 37 گیندوں پر52 رن کی اننگ کھیلی، لیکن انہیں دوسری طرف سےکوئی تعاون ملا۔ کپتان الیکس کیری بھی 19 رن بناکرآؤٹ ہوگئے۔ وہیں، ویلس بھی 26 رن بناکرآؤٹ ہوگئے۔ 16 ویں اوورکی دوسری گیند پرویلنٹ بھی پانچ رن بناکرآؤٹ ہوگئے۔ اس کےبعد راشد خان نے کریزپرقدم رکھا۔ ٹیم کوآخری چاراوورمیں 51 رن کی ضرورت تھی۔ 17 ویں اوورمیں 12 رن بنے، جس میں سے راشد خان نےایک بہترین چھکے سمیت 8 رن بنائے۔ تین اوورمیں ٹیم کو39 رن بنانے تھے۔ اس اوورکی شروعات کی دو گیندوں پرکوئی رن نہیں بنا، جبکہ تیسری پرراشد خان نےچھکا لگا دیا۔ چوتھی گیند پرانہوں نےایک رن لےلیا۔ پانچویں گیند خالی نکالنےکےبعد پیٹر سیڈل نے چھٹی گیند پرایک رن لےلیا۔

راشد خان گیند بازی میں کمال نہیں دکھا سکے اور 4 اوورمیں ایک وکٹ کے لئے 44 رن خرچ کردیئے۔ فائل فوٹو


دو اوورمیں 31 رن کی درکار

اب ٹیم کوآخری دواووروں میں 31 رن کی ضرورت تھی۔ پیٹرسڈل نے پہلی ہی گیند پرایک رن لےلیا۔ دوسری گیند پرایک رن لےکرراشد خان نےبھی اینڈ بدل لیا۔ سڈل کوتیسری گیند پربائی کا ایک رن ملا۔ اس کےبعد راشد خان نے چوتھی گیند پرچوکا، پانچویں گیند پرچھکا اورچھٹی گیند پرپھرچوکا لگا کرٹیم کی جیت کی امید پیدا کردی تھی۔ آخری 6 گیندوں پرٹیم کو14 رن کی ضرورت تھی۔ سڈل نے پہلی گیند پرایک رن لےلیا۔ دوسری گیند پرراشد خان کوئی رن نہیں بنا سکے۔ تیسری اورچوتھی گیند پرانہوں نےمسلسل چوکےلگائے، جس کے بعد دوگیندوں پرجیت کےلئے5 رن کی درکارتھی۔ مگرپانچویں گیند پرراشد خان دوسرا رن لینےکےچکر میں رن آؤٹ ہوگئے۔ ٹیم کواب ایک گیند پرچاررن کی ضرورت تھی، لیکن اگلے بلےبازکے بھی رن آؤٹ ہونے سےایڈیلیڈ تین رن سے یہ قریبی مقابلہ ہارگئی۔
First published: Dec 31, 2019 09:20 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading