உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ٹی-20 عالمی کپ: افغانستان کو شکست دے کر پاکستان کی جیت کی ہیٹ ٹرک، محمد آصف نے کی چھکوں کی برسات

    ٹی-20 عالمی کپ: افغانستان کو شکست دے کر پاکستان کی جیت کی ہیٹ ٹرک

    ٹی-20 عالمی کپ: افغانستان کو شکست دے کر پاکستان کی جیت کی ہیٹ ٹرک

    T20 World Cup 2021: پاکستان نے ٹی-20 عالمی کپ (T20 World Cup-2021) میں مسلسل تیسری جیت درج کی۔ بابر اعظم (Babar Azam) کی کپتانی والی ٹیم نے سپر-12 مرحلے کے اپنے تیسرے مقابلے میں افغانستان کو 5 وکٹ سے شکست دی۔

    • Share this:
      نئی دہلی: پاکستان نے ٹی-20 عالمی کپ (T20 World Cup-2021) میں مسلسل تیسری جیت درج کی۔ بابر اعظم کی کپتانی والی ٹیم نے سپر-12 مرحلے کے اپنے تیسرے مقابلے میں افغانستان کو 5 وکٹ سے شکست دی۔ دبئی انٹرنیشنل کرکٹ اسٹیڈیم میں کھیلے گئے اس مقابلے میں افغانستان نے 20 اوور میں 6 وکٹ گنواکر 147 رن بنائے۔ اس کے بعد پاکستان نے 19 اوور میں 5 وکٹ گنواکر ہدف حاصل کرلیا۔ پاکستان کے لئے کپتان بابر اعظم (Babar Azam) نے سب سے زیادہ 51 رنوں کی اننگ کھیلی۔ پلیئر آف دی میچ آصف علی (Asif Ali) نے اننگ کے 19 ویں اوور میں 4 چھکے لگائے۔

      پاکستان کو آخری دو اوور میں جیت کے لئے 24 رن کی ضرورت تھی۔ کریز پر محمد آصف تھے اور محمد نبی نے گیند کریم جنت کو تھمائی۔ چھٹے نمبر پر بلے بازی کے لئے اترے محمد آصف نے ایسا رنگ جمایا کہ اسی اوور میں ٹیم کو جیت دلا دی۔ محمد آصف نے پہلی گیند کو لانگ آف پر چھکے کے لئے بھیجا۔ پھر تیسری گیند پر ڈیپ مڈ وکٹ میں چھکا لگایا۔ اوور کی آخری دو گیندوں پر بھی چھکے لگاکر محمد آصف نے جیت دلا دی۔ انہوں نے نجی اسکور 7 گیندوں پر ناٹ آوٹ 25 رن پہنچا دیا اور 357 کے اسٹرائیک ریٹ سے رن بنانے کے بعد ناٹ آوٹ پویلین لوٹے۔

      148 رنوں کے ہدف کا تعاقب کرنے اتری پاکستانی ٹیم کو پہلا جھٹکا 12 رن کے اسکور پر لگا۔ وکٹ کیپر بلے باز محمد رضوان (8 رن) کو مجیب الرحمن نے نوین الحق کے ہاتھوں کیچ کرا دیا۔ اس کے بعد فخر زماں اور کپتان بابر اعظم نے جم کر بلے بازی کی۔ دونوں نے پاور پلے میں ٹیم کا اسکور ایک وکٹ پر 38 رن پہنچایا۔ ٹیم کے 50 رن بابر اعظم کے چوکے سے 8.1 اوور میں پورے ہوئے۔ دونوں نے دوسرے وکٹ کے لئے 63 رن جوڑے۔

      اس شراکت کو محمد نبی نے توڑا اور اننگ کے 12 ویں اوور کی پہلی ہی گیند پر فخر زماں کو ایل بی ڈبلیو آوٹ کرکے پویلین بھیج دیا۔ فخر زماں نے 25 گیندوں کی اپنی اننگ میں 2 چوکے اور ایک چھکے کی بدولت 30 رن بنائے۔ چوتھے نمبر پر بلے بازی کو اترے محمد حفیظ کچھ خاص نہیں کر پائے اور 10 رن بناکر راشد خان کا شکار ہوگئے۔ راشد خان نے اس کے بعد کپتان بابر اعظم کو پویلین بھیجا۔ انہوں نے اننگ کے 17 ویں اوور کی آخری گیند پر بابر اعظم کو بولڈ کیا۔ بابر اعظم نے 47 گیندوں پر 4 چوکوں کی مدد سے 51 رن بنائے۔ اگلے اوور میں نوین الحق نے تجربہ کار شعیب ملک (19 رن) کو شہزاد کے ہاتھوں کیچ کرا دیا اور ٹیم کا اسکور 5 وکٹ پر 124 رن ہوگیا۔ شعیب ملک نے 15 گیندوں کی اپنی اننگ میں ایک چوکا اور ایک چھکا لگایا۔

      اس سے قبل افغانستان کے کپتان محمد نبی نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کا فیصلہ کیا۔ پاور پلے میں 4 وکٹ گنوانے کے باوجود افغانی ٹیم 6 وکٹ پر 147 رنوں کا اسکور کھڑا کرنے میں کامیاب رہی۔ محمد نبی اور گلبدین نائب نے 7 ویں وکٹ کے لئے 45 گیندوں پر 71 رن کی ناٹ آوٹ شراکت کی۔ افغانستان نے اننگ کے سب سے زیادہ 21 رن 18 ویں اوور میں جوڑے، جس میں گلبدین نائب نے ایک چھکا اور دو چوکے لگائے۔ گلبدین (25 گیندوں میں 4 چوکے اور ایک چھکا) اور محمد نبی (32 گیندوں میں پانچ چوکے) دونوں نے ناٹ آوٹ 35-35 رن بنائے۔ ان دونوں کی بدولت افغانستان نے آخری تین اوور میں 43 رن جوڑے۔ پاکستان کے لئے عماد وسیم نے 25 رن دے کر 2 وکٹ حاصل کئے۔ شاہین شاہ آفریدی، حارث روف، حسن علی اور شاداب خان کو 1-1 وکٹ ملا۔ پاکستان کی شاندار گیند بازی کے آگے افغانستان نے پاورپلے میں 49 رن پر اپنے 4 کھلاڑیوں کے وکٹ گنوا دیئے تھے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: