ہوم » نیوز » اسپورٹس

آکاش چوپڑا نے کہا- بابر اعظم میں وراٹ کوہلی کی سطح تک پہنچنے کی صلاحیت

سابق ہندوستانی بلے باز اورکمنٹیٹر آکاش چوپڑا نےکہا کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ اعظم میں بہت صلاحیت ہے لیکن کوہلی کی سطح تک پہنچنےمیں انہیں کافی وقت لگے گا۔ وراٹ کوہلی ان سے بڑے ہیں اورانہوں نے پاکستانی بلے باز سے پہلے کرکٹ کھیلنا شروع کیا۔ کوہلی کا نام پہلے ہی بہترین بلے بازوں کی فہرست میں شامل ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Jul 12, 2020 09:39 PM IST
  • Share this:
آکاش چوپڑا نے کہا- بابر اعظم میں وراٹ کوہلی کی سطح تک پہنچنے کی صلاحیت
آکاش چوپڑا نے کہا- بابر اعظم میں وراٹ کوہلی کی سطح تک پہنچنے کی صلاحیت

نئی دہلی: سابق ہندوستانی بلے باز اور کمنٹیٹر آکاش چوپڑا کا خیال ہےکہ پاکستانی بلے باز بابر اعظم وراٹ کوہلی کی سطح تک پہنچنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ چوپڑا نے یہ بات سابق پاکستانی کرکٹر تنویر احمد کے یوٹیوب چینل پر کہی۔ آکاش چوپڑا نےکہا کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ بابر اعظم میں بہت صلاحیت ہے، لیکن وراٹ کوہلی کی سطح تک پہنچنے میں انہیں کافی وقت لگے گا۔ وراٹ کوہلی ان سے بڑے ہیں اور انہوں نے پاکستانی بلے باز سے پہلے کرکٹ کھیلنا شروع کیا۔ کوہلی کا نام پہلے ہی بہترین بلے بازوں کی فہرست میں شامل ہے۔ آکاش چوپڑا کا کہنا ہے کہ پاکستانی بیٹسمین بابراعظم کا کپتان وراٹ کوہلی سے موازنہ قبل از وقت ہے۔


پچھلے کچھ سالوں سے شائقین اور ماہرین کرکٹ کے تمام فارمیٹس میں بابراعظم کی پرفارمنس کا وراٹ کوہلی کی کارکردگی سے موازنہ کرتے رہے ہیں تاہم بابراعظم نے اکثرکہا ہےکہ وہ اور کوہلی مختلف کھلاڑی ہیں۔ بابر اعظم پاکستان اسکواڈ کا حصہ ہیں جن کا گذشتہ ماہ کووڈ 19 کا ٹیسٹ منفی آیا تھا اور انگلش ٹیم کےخلاف تین ٹیسٹ میچوں کی سیریز کے لئے وہ اتوار کو برطانیہ پہنچے تھے۔




آکاش چوپڑا نےکہا کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ بابر اعظم میں بہت صلاحیت ہے، لیکن وراٹ کوہلی کی سطح تک پہنچنے میں انہیں کافی وقت لگے گا۔
آکاش چوپڑا نےکہا کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ بابر اعظم میں بہت صلاحیت ہے، لیکن وراٹ کوہلی کی سطح تک پہنچنے میں انہیں کافی وقت لگے گا۔

آکاش چوپڑا کو لگتا ہے کہ پاکستان کے ٹیسٹ کپتان بابر اعظم ہندوستان کے کپتان کوہلی کی سطح تک پہنچنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ یہ دونوں بلے باز اپنی کھیل صلاحیت، انداز اور ناقابل یقین مستقل مزاجی کے لئےایک دوسرے کے خلاف مداحوں اور نقادوں کے زیر بحث رہے ہیں۔
چوپڑا نے بتایا کہ اعظم میں ایک ناقابل یقین ٹیلنٹ ہے لیکن اس کو اس منزل تک پہنچنے میں وقت لگے گا جہاں کوہلی بہت عرصے پہلے پہنچ چکے ہیں۔بابر اعظم ایک دلچسپ باصلاحیت کھلاڑی ہے۔ اس میں کوئی شک نہیں ہے۔ یہ بھی سچ ہے کہ وراٹ کوہلی اس دوڑ میں بہت آگے ہیں.لیکن اعظم میں اس منزل تک پہنچنے کے لئے درکار ہنر اور صلاحیت ہے۔ لیکن اصل سوال یہ ہے کہ کیا وہ ان بلندیوں تک پہنچ پائیں گے کیوں کہ اس کا انحصار بہت ساری چیزوں جیسے نظم و ضبط ، انجری، فارم اور متعدد دیگر عوامل پر ہوتا ہے جو وقت کے ساتھ ساتھ آگے بڑھتے ہیں۔




آکاش چوپڑا کا کہنا ہے کہ یہ بھی سچ ہے کہ وراٹ کوہلی اس دوڑ میں بہت آگے ہیں.لیکن اعظم میں اس منزل تک پہنچنے کے لئے درکار ہنر اور صلاحیت ہے۔
آکاش چوپڑا کا کہنا ہے کہ یہ بھی سچ ہے کہ وراٹ کوہلی اس دوڑ میں بہت آگے ہیں.لیکن اعظم میں اس منزل تک پہنچنے کے لئے درکار ہنر اور صلاحیت ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ٹیلنٹ صرف آپ کو ایک جگہ لے جاسکتا ہے لیکن آپ کو یہ حیرت انگیز جذبہ رکھنا چاہئے جو آپ کو آگے بڑھاتا ہے۔ وراٹ کے پاس ابتدا میں ایسا کچھ نہیں تھا بلکہ اسے کوہلی سخت محنت سے حاصل کیا۔ بابراعظم کا کہنا تھا کہ ان کی ٹیم قرنطینہ کے باعث ہوٹل اور گراؤنڈ تک محدود ہے تاہم وہ سب انگلینڈ میں ٹریننگ سے لطف اندوز ہو رہے ہیں۔ ٹیسٹ سیریز میں انگلینڈ کو شکست دینے کے امکانات کے بارے میں بات کرتے ہوئے بابر اعظم نے کہا کہ انہیں یقین ہے کہ پاکستان کا فاسٹ بولنگ اٹیک انگلینڈ کے ٹاپ آرڈر کو پریشان کرنے میں کامیاب رہے گا ۔ انہوں نے کہا کہ ’ہم نے اپنے گذشتہ دورہ انگلینڈ کے دوران عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کیا تھا جس کی وجہ سے کھلاڑی اس سیریز کے مثبت نتائج کے لیے بھی پُرامید ہیں۔

Published by: Nisar Ahmad
First published: Jul 12, 2020 09:27 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading