உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    انگلینڈ نے بنایا شرمناک ریکارڈ، 144سال کی ٹسٹ تاریخ میں صرف دوسری بار ہوا یہ بدترین انجام

    Ashes Series 2021-22: انگلینڈ کے بلے باز اس سال 54 بار صفر پر آوٹ ہوئے۔ (اے ایف پی)

    Ashes Series 2021-22: انگلینڈ کے بلے باز اس سال 54 بار صفر پر آوٹ ہوئے۔ (اے ایف پی)

    Ashes Series 2021-22: انگلینڈ کے بلے باز ایشیز سیریز کے تیسرے مقابلے میں بھی بری طرح فلاپ رہے۔ انگلینڈ کی پہلی اننگ 185 رنوں پر سمٹی جبکہ دوسری اننگ میں اس کے بلے باز صرف 68 رن ہی بناسکے۔ کپتان جو روٹ (Joe Root) کے علاوہ کوئی بلے باز کریز پر ٹکنے میں ناکام رہا۔ میلبورن ٹسٹ میں اس کے 6 کھلاڑی کھاتہ بھی نہیں کھول سکے۔

    • Share this:
      میلبورن: جو روٹ (Joe Root) کی کپتانی والی انگلینڈ کی ٹیم کو میلبورن ٹسٹ میں آسٹریلیا نے شرمناک شکست دی۔ ایشیز سیریز (Ashes Series) کے تیسرے ٹسٹ میچ میں آسٹریلیا نے مہمان ٹیم (Australia vs England) کو ایک اننگ اور 14 رنوں کے فرق سے ہرایا۔ اس کے ساتھ پیٹ کمنس (Pat Cummins) کی قیادت والی آسٹریلیائی ٹیم نے ایشیز سیریز پر بھی قبضہ کرلیا۔ میزبان آسٹریلیا اب پانچ ٹسٹ میچوں کی سیریز میں 0-3 سے آگے ہے۔ انگلینڈ کی پہلی اننگ 185 رنوں پر سمٹ گئی تھی جبکہ دوسری اننگ میں اس کے بلے باز 68 رن پر آل آوٹ ہوگئے۔

      انگلینڈ کی دوسری اننگ کی بات کریں تو ڈیوڈ ملان، جیک لیچ، مارک ووڈ اور آلی رابنسن کھاتہ نہیں کھول سکے۔ وہیں پہلی اننگ میں سلامی بلے باز حسیب احمد زیرو پر آوٹ ہوگئے تھے۔ اس کے ساتھ انگلینڈ کی ٹیم نے ایک خراب ریکارڈ اپنے نام کرلیا ہے۔ اس کے بلے باز اس سال یعنی 2021 میں 54 بار صفر پر آوٹ ہوچکے ہیں۔ 144 سال سے ٹسٹ کرکٹ کھیل رہی انگلینڈ کی ٹیم کے ساتھ صرف دوسری بار ایسا ہوا ہے۔ اس سے پہلے 1998 میں انگلینڈ کے کھلاڑی سب سے زیادہ 54 بار صفر پر آوٹ ہوئے تھے۔

      اسکاٹ بولینڈ نے برپا کیا قہر

      اس مقابلے میں ڈیبیو کرنے والے 32 سالہ تیز گیند باز اسکاٹ بولینڈ (Scott Boland) نے دوسری اننگ میں قاتلانہ گیند بازی کی۔ بولینڈ نے انگلینڈ کے خلاف دوسری اننگ میں صرف سات رن دے کر 6 وکٹ حاصل کئے۔ بولینڈ نے کل سات وکٹ حاصل کئے اور انہیں ’مین آف دی میچ‘ منتخب کیا گیا۔

      جو روٹ نے 1700 رنوں کا اعدادوشمار حاصل کیا

      انگلینڈ کے کپتان جو روٹ نے دوسری اننگ میں 28 رن بنائے۔ اس کے ساتھ ہی ایک کلینڈر سال میں 1700 سے زیادہ ٹسٹ رن بنانے والے دنیا کے تیسرے بلے باز بنے۔ جو روٹ نے اس سال 15 ٹسٹ میں 29 اننگوں میں 61 کی اوسط سے 1708 رن بنائے۔ 6 سنچری اور 4 سنچری لگائی۔

      جو روٹ حالانکہ محمد یوسف اور ویو رچرڈس کا ریکارڈ توڑنے سے محروم رہ گئے۔ عالمی ریکارڈ پاکستان کے محمد یوسف کے نام پر ہے جنہوں نے 2006 میں 11 میچوں میں 1788 رن بنائے تھے۔ ان کے بعد ویسٹ انڈیز کے طوفانی بلے باز ویو رچرڈس کا نمبر آتا ہے، جنہوں نے 1976 میں 11 ٹسٹ میچوں میں 1710 رن بنائے تھے۔

      قومی، بین الاقوامی اور جموں وکشمیر کی تازہ ترین خبروں کےعلاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں۔

      Published by:Nisar Ahmad
      First published: