ہوم » نیوز » اسپورٹس

ایشیا کپ 2018: ہندوستان اور افغانستان کے درمیان دلچسپ میچ ہوا ٹائی

اس مقابلے میں کوئی بھی ایسی ٹیم نہیں ہے جس کو افغانستان نے زبردست ٹکر نہ دی ہو. میچ ٹائی ہوگیا لیکن افغانستان نے کرکٹ شائقین کا دل ضرور جیت لیا۔

  • Share this:
ایشیا کپ 2018: ہندوستان اور افغانستان کے درمیان دلچسپ میچ ہوا ٹائی
افغانستان کے خلاف ٹیم انڈیا کے بلے بازوں کو جدوجہد کرنی پڑ رہی ہے۔

ایشیا کپ 2018 کے سپر-4 کا پانچواں میچ ہندوستان اور افغانستان کے درمیان انتہائی دلچسپ ہوا کیونکہ یہ میچ ٹائی ہوگیا. افغانستان نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کرتے ہوئے محمد شہزاد کی سنچری کی بدولت 8 وکٹ کے نقصان پر 252 رن بنائے تھے، جس کے جواب میں ہندوستانی ٹیم پچاسویں اوور میں ایک گیند باقی رہتے ہی 252 رن بنا کر آل آوٹ ہوگئی. دونوں اننگ کے ہیرو افغانستان کے بلے باز محمد شہزاد رہے اس لئے ان کو "مین آف دی میچ" منتخب کیا گیا۔


حالانکہ ٹیم انڈیا کو اس وقت زبردست جھٹکا لگا جب تیسرے وکٹ کے طورپرکپتان مہندرسنگھ دھونی کو امپائر کے غلط فیصلے کا شکار ہونا پڑا۔ دھونی ریویو بھی نہیں لے سکتے تھے، کیونکہ کے ایل راہل نے آوٹ ہونے کے بعد ریویو لے لیا تھا، جو ضائع ہوگیا تھا۔ دھونی نے آوٹ ہونے سے قبل 17 گیندوں پر8 رن بنائے۔ انہیں جاوید احمدی کی گیند پرآوٹ دیا گیا۔


ہندوستان کی طرف سے کے ایل راہل نے 60 اور امباتی رائیڈو نے 57 رنوں کی بہترین اننگ کھیلی. جبکہ دنیش کارتک نے 44 رن بنائے. افغانستان کا آخری شکار رویندر جڈیجہ نے 25 رن بنائے، لیکن وہ ٹیم کو جیت دلانے میں ناکام رہے۔ افغانستان کی طرف سے راشد خان، محمد نبی اور آفتاب خان نے دو دو وکٹ حاصل کئے جبکہ جاوید احمدی کو ایک وکٹ ملا جبکہ تین کھلاڑی رن آؤٹ ہوئے۔


اس سے قبل سلامی بلے بازوں کے ایل راہل اورامباتی رائیڈو دونوں نے نصف سنچری لگائی. حالانکہ آوٹ ہونے سے قبل انہوں نے ٹیم انڈیا کو جیت کے راستے پرپہنچا دیاتھا، لیکن سلامی بلے بازوں کے بعد جب کپتان دھونی آوٹ ہوئے تو افغانستان نے میچ میں واپسی کرلی اور میچ کے اخیر تک میچ میں دلچسپی بنی رہی۔

ہندوستان اور افغانستان کے درمیان یہ مقابلہ ٹائی ضرور ہوگیا، لیکن افغانستان نے کرکٹ شائقین کا دل جیت لیا. ایشیا کپ کے سپر - 4 میں پہنچی کوئی بھی ٹیم ایسی نہیں ہے، جس کو افغانستان نے زبردست ٹکر نہ دی ہو۔

اس سے قبل افغانستان کے بلے بازوں نے ہندوستان کے خلاف 50 اوورمیں 8 وکٹ کے نقصان پر 252 رن بنالئے۔  سلامی بلے بازوں کے بہترین آغازکے بعد مڈل آرڈرتاش کے پاتوں کی طرح بکھر گیا ہے، لیکن اس درمیان محمد شہزاد نے اپنی سنچری مکمل کرلی جبکہ محمد نبی نےنصف سنچری بنائی۔

دونوں بلے بازوں کی بہترین اننگ کی بدولت ہی افغانستان باعزت اسکور تک پہنچ سکا۔ محمد شہزاد نے طوفانی سنچری لگاتے ہوئے 124 رنوں کی اننگ کھیلی جبکہ محمد نبی نے 56 گیندوں میں 64 رن بنائے۔ انہوں نے 4 چھکے اورتین چوکے لگائے۔  ہندوستان کی طرف سے رویندر جڈیجہ نے تین وکٹ لئے جبکہ کلدیپ یادو کو دووکٹ ملے۔ اس کےعلاوہ خلیل احمد، جادھواورچہرکو ایک ایک وکٹ ملا۔

اس سے قبل نجیب اللہ زدران 20 رن بناکرآوٹ ہوگئے۔  افغانستان کی ریڑھ کی ہڈی اصغرافغان صفرپرآوٹ ہوگئے ہیں انہیں کلدیپ یادو  نے بولڈ کیا۔ حالانکہ محمد شہزاد کی جارحانہ اننگ کی بدولت افغانستان نے 30 اوور میں 5 وکٹ کے نقصان پر136 رن  بنالئے ہیں۔   گلبدین نائب 15 رن بناکرآوٹ ہوگئے۔ جبکہ حشمت اللہ بغیرکھاتہ کھولے پویلین لوٹ گئے۔ انہیں کلدیپ یادو نے دھونی کے ہاتھوں کیچ آوٹ کرایا ہے۔  اس سے قبل رحمت شاہ محض 3رن بناکرپویلین لوٹ گئے۔ جبکہ جاوید احمدی پانچ رن بناکرآوٹ ہوئے۔

اس سے قبل افغانستان نے ٹاس جیت کرپہلے بلے بازی کرنے کافیصلہ کیا ہے۔ خاص بات یہ ہے کہ ٹیم انڈیا کی کمان مہیندرسنگھ دھونی کے ہاتھوں میں ہے۔ دراصل ٹیم انڈیا کے مستقل کپتان وراٹ کوہلی کوایشیا کپ میں آرام دیا گیا ہے اوران کی جگہ پرروہت شرما کو کپتان بنایا گیا ہے، لیکن آج کے میچ میں روہت کوبھی آرام دیا گیا ہے۔ ان کی عدم موجودگی میں سابق کپتان مہیندرسنگھ دھونی ایک بارکپتانی کی ذمہ داری سنبھال رہے ہیں۔ دھونی کا شمار ہندوستان کے بہترین کپتان میں ہوتا ہے۔
First published: Sep 25, 2018 10:40 PM IST