உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Asia Cup 2022: ہندوستان نے پاکستان کو کیا تہس نہس، 9 بلے باز دہائی کے اعدادوشمار تک نہیں پہنچ سکے

    Asia Cup 2022: ہندوستان نے پاکستان کو زبردست شکست دی تھی۔ (AFP)

    Asia Cup 2022: ہندوستان نے پاکستان کو زبردست شکست دی تھی۔ (AFP)

    Asia Cup 2022: ٹی20 ایشیا کپ کے دوسرے سیزن میں ٹیم انڈیا بطور چمپئن اترے گی۔ سال 2016 کے بعد پہلی بار اس کا انعقاد ٹی20 فارمیٹ کی بنیاد پر کیا جا رہا ہے۔ ایشیا کپ کے مقابلے 27 اگست سے شروع ہو رہے ہیں۔ 

    • Share this:
      نئی دہلی: ٹیم انڈیا (Team India) ٹی20 ایشیا کپ میں بطور چمپئن اترے گی۔ ٹی20 ٹورنا منٹ 27 اگست سے 11 ستمبر تک یو اے ای میں ہونا ہے۔ اس فارمیٹ میں دوسری بار ٹورنا منٹ منعقد کیا جا رہا تھا۔ پہلی بار اس کا انعقاد سال 2016 میں بنگلہ دیش میں کیا گیا تھا۔ تب ہندوستانی ٹیم ہی چمپئن بنی تھی۔ موجودہ ٹورنا منٹ میں کل 6 ٹیمیں اتر رہی ہیں۔

      ہندوستان اور پاکستان کے درمیان (IND vs PAK) 28 اگست کو دبئی میں مقابلہ ہونا ہے۔ جب ٹی20 ٹورنا منٹ میں گزشتہ بار دونوں ٹیمیں آمنے سامنے ہوئی تھیں، تب ہندوستان کو بڑی جیت ملی تھی۔ ایسے میں روہت شرما (Rohit Sharma) کی قیادت میں ہندوستانی ٹیم کی نظر مسلسل دوسرے خطاب کے ساتھ ساتھ پاکستان کو پٹخنی دینے پر بھی ہوگی۔

      ہندوستان اور پاکستان سال 2016 میں ٹی20 عالمی کپ میں 27 فروری کو میر پور میں آمنے سامنے ہوئے تھے۔ کپتان ایم ایس دھونی نے ٹاس جیت کر گیند بازی کرنے کا فیصلہ کیا۔ ہندوستانی گیند بازوں کو ان کے فیصلے کو ثابت اور پاکستان کے 9 بلے باز دہائی کے اعدادوشمار تک نہیں پہنچ سکے۔ پہلے اوور میں بائیں ہاتھ کے تیز گیند باز آشیش نہرا نے محمد حفیظ (4) کو آوٹ کیا۔ چوتھے اوور میں شرجیل خان (7) کو جسپریت بمراہ نے آوٹ کیا۔

      3 اوور میں 4 وکٹ گنوائے

      اس کے بعد پاکستان کی ٹیم لڑکھڑا گئی۔ چھٹے اوور کی پانچویں گیند پر خرم منظور 10 رن بناکر رن آوٹ ہوئے۔ ساتویں اوور کی آخری گیند پر ہاردک پانڈیا نے شعیب ملک (4)  کو دھونی کے ہاتھوں کیچ کرایا۔ 8ویں اوور میں پاکستان نے دو وکٹ گنوائے۔ پہلے عمر اکمل (3) کو یوراج سنگھ نے پویلین بھیجا۔ پھر کپتان شاہد آفریدی (2) رن بناکر آوٹ ہوگئے۔ اس طرح سے اسکور 6 وکٹ پر 42 رن ہوگیا۔ سرفراز احمد نے 25 رن بناکر اسکور کو 80 رن کے پار پہنچایا۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: