உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بابر اعظم نے حسن علی- فخر زماں کے بچاو میں کہا- ہر میچ میں 11 کھلاڑی بہترین کارکردگی نہیں پیش کرسکتے

    بابر اعظم نے حسن علی- فخر زماں کے بچاو میں کہا- ہر میچ میں 11 کھلاڑی بہترین کارکردگی نہیں پیش کرسکتے

    بابر اعظم نے حسن علی- فخر زماں کے بچاو میں کہا- ہر میچ میں 11 کھلاڑی بہترین کارکردگی نہیں پیش کرسکتے

    T20 World Cup 2021: بابر اعظم (Babar Azam) نے کہا کہ انہیں امید ہے کہ جمعرات کو آسٹریلیا (Pakistan vs Australia) کے خلاف سیمی فائنل میں فخر زماں اور حسن علی دونوں فارم میں واپسی کریں گے۔ پاکستان ٹورنامنٹ کی واحد ٹیم ہے، جس کو ایک بھی شکست کا سامنا نہیں کرنا پڑا ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: پاکستان کے کپتان بابر اعظم (Babar Azam) نے خراب فارم سے جدوجہد کر رہے بلے باز فخر زماں اور تیز گیند باز حسن علی (Hasan Ali) کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ وہ موجودہ ٹی-20 عالمی کپ کے ناک آوٹ مرحلے میں اچھی کارکردگی پیش کریں گے کیونکہ وہ بڑے میچ کے کھلاڑی ہیں۔ میڈیا سے آن لائن بات چیت میں بابر اعظم نے کہا کہ انہیں امید ہے کہ جمعرات کو آسٹریلیا (Pakistan vs Australia) کے خلاف سیمی فائنل میں فخر زماں اور حسن علی دونوں فارم میں واپسی کریں گے۔

      ٹورنا منٹ میں فخر زماں کی خراب کارکردگی کے بارے میں پوچھے جانے پر بابر اعظم نے کہا، ’آپ چاہتے ہیں کہ سبھی 11 کھلاڑی بہترین کارکردگی پیش کریں؟ کرکٹ میں ایسا نہیں ہوتا، ایک میچ میں تین یا چار کھلاڑی ہی بہترین کارکردگی پیش کرتے ہیں‘۔ انہوں نے کہا، ’ایک میچ میں دو بلے باز بہترین کارکردگی پیش کرتے ہیں۔ ایک میچ میں سبھی کھلاڑی اچھی کارکردگی نہیں کرسکتے۔ فخر زماں جس طرح کھیل رہا ہے، اس کے پاس خود اعتمادی ہے۔ وہ جس دن اچھی کارکردگی پیش کرے گا، اس دن اکیلے دم پر میچ کا پاسا پلٹ سکتا ہے اور مجھے پورا بھروسہ ہے کہ وہ آئندہ میچوں میں ایسا کرے گا‘۔

      یہ بھی پڑھیں

      پاکستان کرکٹ بورڈ کے لئے بڑی خوشخبری! 24 سال بعد پاکستان کا دورہ کرے گی آسٹریلیائی ٹیم

      فخر زماں نے ہندوستان کے خلاف 2017 چمپئنز ٹرافی کے فائنل میں سنچری لگاکر پاکستان کو جیت دلانے میں اہم کردار نبھائی تھی۔ گیند بازی شعبہ کی سب سے کمزور کڑی حسن علی پر بابر اعظم نے کہا کہ انہیں آخری الیون سے باہر کرنے کا خیال کبھی ان کے دماغ میں نہیں آیا۔ انہوں نے کہا کہ، ’میں اسے باہر کرنے کے بارے میں نہیں سوچ سکتا۔ وہ میرا اہم گیند باز ہے، اس نے ہمیں میچ جتائے ہیں، ٹورنامنٹ جتائے ہیں۔ اتار چڑھاو کسی کے بھی کیریئر کا حصہ ہوتے ہیں اور جب آپ کا اہم کھلاڑی اچھا نہیں کر رہا ہوتا تو آپ کو اس کی حمایت کرنی ہوتی ہے اور پوری ٹیم اس کے ساتھ ہے‘۔

      یہ بھی پڑھیں

      ٹی-20 عالمی کپ: بابر اعظم نے کہا- پاکستانی ٹیم خوداعتمادی سے لبریز، سیمی فائنل میں بھی یہی کارکردگی رکھیں گے برقرار

      بابر اعظم نے کہا، ’وہ ذہنی طور پر کافی مضبوط ہے اور میرا ماننا ہے کہ وہ بڑے میچ کا کھلاڑی ہے اور سیمی فائنل میں اچھی کارکردگی پیش کرے گا‘۔ پاکستان ٹورنامنٹ کی واحد ایسی ٹیم ہے، جس نے کوئی مقابلہ نہیں گنوایا ہے، لیکن ٹیم پاور پلے میں کافی رن نہیں بنا پائی ہے اور ٹیم آسٹریلیا کے خلاف اس میں سدھار کرنا چاہے گی۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: