உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    PAK vs SL: بابر اعظم کی شاندار سنچری برسوں رکھے جائے گی یاد، اکیلے پلٹ دیا پورا میچ

    Pakistan vs Sri Lanka: سری لنکا نے پاکستان کے خلاف پہلے ٹسٹ کی پہلی اننگ میں 222 رن بنائے۔ پاکستان نے اس کے جواب میں 85 رنوں پر سات وکٹ گنوا دیئے تھے، لیکن پاکستانی کپتان بابر اعظم (Babar Azam century) نے 119 رن بناکر اپنی ٹیم کو سنبھال لیا۔ پاکستان کی اننگ کے 53.60 فیصدی رن بابر اعظم کے بلے سے نکلے۔

    Pakistan vs Sri Lanka: سری لنکا نے پاکستان کے خلاف پہلے ٹسٹ کی پہلی اننگ میں 222 رن بنائے۔ پاکستان نے اس کے جواب میں 85 رنوں پر سات وکٹ گنوا دیئے تھے، لیکن پاکستانی کپتان بابر اعظم (Babar Azam century) نے 119 رن بناکر اپنی ٹیم کو سنبھال لیا۔ پاکستان کی اننگ کے 53.60 فیصدی رن بابر اعظم کے بلے سے نکلے۔

    Pakistan vs Sri Lanka: سری لنکا نے پاکستان کے خلاف پہلے ٹسٹ کی پہلی اننگ میں 222 رن بنائے۔ پاکستان نے اس کے جواب میں 85 رنوں پر سات وکٹ گنوا دیئے تھے، لیکن پاکستانی کپتان بابر اعظم (Babar Azam century) نے 119 رن بناکر اپنی ٹیم کو سنبھال لیا۔ پاکستان کی اننگ کے 53.60 فیصدی رن بابر اعظم کے بلے سے نکلے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: پاکستان کے کپتان بابر اعظم نے سری لنکا کے خلاف (Pakistan vs Sri Lanka) پہلے ٹسٹ میں یادگار سنچری لگائی۔ انہوں نے یہ سنچری اننگ تب کھیلی، جب پاکستان کی ٹیم 85 رن پر 7 وکٹ گنواکر مشکل میں تھی۔ گالے میں کھیلے جا رہے ٹسٹ میچ میں کہاں تو پاکستان کو ہی 100 رن بنانے کے لالے پڑے تھے اور کہاں اکیلے بابر اعظم نے ہی 100 سے زیادہ رن بنا دیئے۔ میچ میں ایک وقت لگ رہا تھا کہ سری لنکا 120-130 رنوں کی سبقت لے لے گا۔ تاہم بابر اعظم (Babar Azam) نے آخر کے تین بلے بازوں کے ساتھ 133 رن کی شراکت کرکے اپنی ٹیم کو تقریباً برابری پر لاکھڑا کیا۔

      پاکستان اور سری لنکا کے درمیان گالے میں ٹسٹ میچ کھیلا جا رہا ہے۔ میچ کے پہلے دن سری لنکا کی ٹیم نے 222 رن بنائے۔ اس کے جواب میں پاکستان کی ٹیم نے دوسرے دن 85 رنوں پر سات وکٹ گنوا دیئے تھے، لیکن کپتان بابر اعظم نے 119 رنوں کی اننگ بہترین کھیل کر پاکستان کو 218 رن تک پہنچا دیا۔ اس طرح پاکستان کی اننگ کے 53.60 فیصدی رن بابر اعظم کے بلے سے نکلے۔ بابر اعظم کی یہ ساتویں ٹسٹ سنچری ہے۔

      بابر اعظم جب میچ میں بلے بازی کرنے آئے تو پاکستان کا اسکور 2 وکٹ پر 21 رن تھا۔ انہوں نے یہاں سے ایک اینڈ تو سنبھال لیا، لیکن دوسرے اینڈ پر مسلسل وکٹ گرتے رہے۔ جب تک ٹیم کا اسکور 73 رن پہنچا، تب تک اس کے نصف بلے باز آوٹ ہوگئے۔ ان دباو کے لمحوں میں بابر اعظم نے نہ صرف ایک اینڈ سنبھالا، بلکہ 48.77 کے اچھے اسٹرائیک ریٹ سے رن بنائے۔ بابر اعظم نے 244 گیندوں کی اپنی اننگ میں 11 چوکے اور 2 چھکے لگائے۔

      بابر اعظم نے اس اننگ کے دوران ایک خاص حصولیابی اپنے نام کی۔ وہ انٹرنیشنل کرکٹ میں سب سے تیزی سے 10 ہزار رن بنانے والے ایشیائی کرکٹر بن گئے ہیں۔ ان سے پہلے یہ ریکارڈ وراٹ کوہلی کے نام تھا۔ وراٹ کوہلی (Virat Kohli) نے انٹرنیشنل کرکٹ میں 10 ہزار رن 232 اننگوں میں بنائے تھے۔ بابر اعظیم نے یہ کمال 228 اننگوں میں ہی کردکھا ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: