உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    BCCI contracts: رَہانے-پجارا، ہاردک پانڈیا کی گریڈ اے سے چھٹی، ساہا کو بھی نقصان

    BCCI کے سینٹرل کانٹریکٹ میں ان کھلاڑیوں کو ہوا نقصان۔

    BCCI کے سینٹرل کانٹریکٹ میں ان کھلاڑیوں کو ہوا نقصان۔

    اس نئی ڈیل سے سب سے زیادہ نقصان آل راؤنڈر ہاردک پانڈیا کو ہوا ہے۔ ہاردک پہلے گریڈ اے میں تھے۔ تاہم اب انہیں گریڈ سی میں دو درجے نیچے رکھا گیا ہے۔ ہاردک چوٹ کی وجہ سے طویل عرصے سے ٹیم سے باہر ہیں۔ ہاردک کے بجائے وینکٹیش ایئر ٹیم انڈیا میں آل راؤنڈر کا کردار ادا کر رہے ہیں۔

    • Share this:
      نئی دہلی:بی سی سی آئی ہر سال کھلاڑیوں کے سالانہ معاہدوں کا اعلان کرتا ہے۔ انہوں نے ابھی تک اس بارے میں کوئی باضابطہ اعلان نہیں کیا ہے۔ تاہم ذرائع کے مطابق A+ کیٹیگری کے کھلاڑیوں میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی ہے۔ تاہم ٹیسٹ ٹیم کے لیجنڈری کھلاڑی چیتشور پجارا (Cheteshwar Pujara)، اجنکیا رہانے(Ajinkya Rahane) اور ریدھیمان ساہا(Wriddhiman Saha)کو نقصان ضرور ہوا ہے۔ ان تینوں کھلاڑیوں کے ساتھ ساتھ اسٹار آل راؤنڈر ہاردک پانڈیا کو بھی نقصان ہوا ہے۔ یہ تمام کھلاڑی فی الحال ٹیم انڈیا سے باہر ہیں۔

      بی سی سی آئی نے کھلاڑیوں کو 4 گریڈ میں تقسیم کیا ہے۔ گریڈ A+، گریڈ A، گریڈ B اور گریڈ C ہیں۔ چاروں گریڈوں کی رقم میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی۔ گریڈ A+ میں تین کھلاڑی ہیں۔ اس میں ٹیم کے سابق کپتان ویراٹ کوہلی، روہت شرما اور فاسٹ بولر شامل تھے۔ انہیں سالانہ 7 کروڑ روپے ملیں گے۔ اے گریڈ کے کھلاڑیوں کو 5 کروڑ روپے ملیں گے۔ گریڈ بی کے کھلاڑیوں کو 3 کروڑ روپے ملیں گے۔ ساتھ ہی گریڈ سی کے کھلاڑیوں کو ایک کروڑ روپے دیے جائیں گے۔ تمام کھلاڑیوں کا نیا معاہدہ یکم اکتوبر 2021 سے ستمبر 2022 تک ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      26مارچ سے ہوگیIPLکی شروعات:لیگ اسٹیج کے55میچ ممبئی اور15پونے میں، آج میٹنگ میں ہوگا فیصلہ

      ان کھلاڑیوں کو ہوا نقصان
      پچھلے سال، جب بی سی سی آئی نے سالانہ معاہدے کا اعلان کیا، پجارا اور رہانے گریڈ اے میں تھے۔ تاہم نئے معاہدے میں ان دونوں کو گریڈ بی میں رکھا گیا ہے۔ پجارا اور رہانے دونوں کچھ عرصے سے خراب فارم سے لڑ رہے ہیں۔ انہیں سری لنکا کے خلاف ٹیسٹ سیریز کے لیے بھی ٹیم میں منتخب نہیں کیا گیا ہے۔ حال ہی میں، بی سی سی آئی نے تنازعات میں گھرے وکٹ کیپر بلے باز ریدھیمان ساہا کو ڈیموٹ کیا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں
      IPL-2022 کا شیڈول جاری، 2 الگ الگ گروپ میں تقسیم کی گئیں 10 ٹیمیں، جانئے مکمل تفصیل

      اس نئی ڈیل سے سب سے زیادہ نقصان آل راؤنڈر ہاردک پانڈیا کو ہوا ہے۔ ہاردک پہلے گریڈ اے میں تھے۔ تاہم اب انہیں گریڈ سی میں دو درجے نیچے رکھا گیا ہے۔ ہاردک چوٹ کی وجہ سے طویل عرصے سے ٹیم سے باہر ہیں۔ ہاردک کے بجائے وینکٹیش ایئر ٹیم انڈیا میں آل راؤنڈر کا کردار ادا کر رہے ہیں۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: