ہوم » نیوز » اسپورٹس

سوربھ گانگولی کا ٹیم انڈیا کے سلیکشن پینل پر بڑا بیان، ایم ایس کے پرساد کی مشکلات میں اضافہ

ٹیم انڈیا کی سلیکشن کمیٹی میں ایم ایس کے پرساد اورگگن کھوڑا کی مدت مکمل ہوچکی ہے اوردیوانگ گاندھی، جتن پرانجپے اورشرن دیپ سنگھ کی مدت ابھی ایک سال باقی ہے۔

  • Share this:
سوربھ گانگولی کا ٹیم انڈیا کے سلیکشن پینل پر بڑا بیان، ایم ایس کے پرساد کی مشکلات میں اضافہ
سوربھ گانگولی کا ٹیم انڈیا کے سلیکشن پینل پر بڑا بیان

نئی دہلی: ہندوستانی مرد کرکٹ ٹیم کی سلیکشن کمیٹی کولےکربی سی سی آئی صدراورسابق ہندوستانی کپتان سوربھ گانگولی نےبڑا بیان دیا ہے۔ انہوں نےکہا کہ سلیکشن کمیٹی میں صرف دوتبدیلیاں کی جائیں گی اوراس میں پوری طرح تبدیلی نہیں آئےگی۔ ایک انگریزی اخبارسےبات چیت میں سوربھ گانگولی نےکہا کہ موجودہ سلیکشن کمیٹی سے صرف دو ممبران کوتبدیل کیا جائےگا۔ انہوں نے ہندوستان ٹائمس سےکہا، 'صرف دوسلیکٹروں کےنام کا اعلان ہوگا'۔ واضح رہےکہ ایم ایس کے پرساد اورگگن کھوڑا کی مدت مکمل ہوچکی ہے اور ان دونوں کی جگہ ہی نئےسلیکٹرآئیں گے۔ وہیں دیوانگ گاندھی، جتن پرانجپےاورشرن دیپ سنگھ کی مدت میں ابھی ایک سال باقی ہےاوریہ ابھی برقراررہیں گے۔


لکشمن شیوراما کرشنن کا چل رہا ہے نام


سلیکشن کمیٹی کےدونئےاراکین کا اعلان جلد ہی کیا جائےگا اوراس کےلئےکرکٹ مشاورتی کمیٹی بنائی جائےگی۔ بی سی سی آئی صدرنےنئےسلیکٹروں کےلئےکسی کا نام بتانےسے انکارکیا۔ میڈیا میں ہندوستانی سلیکشن کمیٹی کےنئے سربراہ کےلئےلکشمن شیوراما کرشنن کا نام چل رہا ہے۔


جلد ہی ہوگا نئے سلیکٹروں پرفیصلہ

سوربھ گانگولی نےکہا 'کرکٹ مشاورتی کمیٹی بنانےکےلئے 3-2 دن کا وقت لگےگا۔ ابھی سےکسی کا نام بتانےکا کوئی مطلب نہیں ہےکیونکہ جب سی اے سی کےلئےکھلاڑیوں سے رابطہ کریں گےتووہ جواب دینےکےلئےکچھ وقت لیں گے۔ ہم جلد ہی اس بارے میں بتائیں گے'۔

ایم ایس کے پرساد کی بطور چیف سلیکٹرمدت کار ختم ہوگئی ہے۔ فائل فوٹو


سپرسیریزپرگانگولی نے دیا یہ بیان

سوربھ گانگولی نےآسٹریلیا، انگلینڈ کے ساتھ چارممالک کی سپرسیریزپرکہا کہ ابھی یہ صرف تجویزہے۔ دیکھنا ہوگا کہ آگے اس پرکیا ہوتا ہے۔ انہوں نےکہا کہ 'ہمیں براڈ کاسٹرس اورآئی سی سی سے 4 ممالک کےٹورنامنٹ کےلئےاجازت لینی ہوگی۔ اس کے بعد فیوچر ٹور پروگرام کوبھی دیکھنا ہوگا۔ ہم کوالٹی کرکٹ چاہتے ہیں، آج ہم دیکھ رہے ہیں کہ صرف دوطرفہ سیریزہورہی ہے۔ لوگ ہائی کلاس ٹورنامنٹ دیکھنا چاہتے ہیں'۔
First published: Dec 28, 2019 05:51 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading