உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پاکستانی خاتون کرکٹر کو بیٹی کو ساتھ میں رکھنے کی نہیں ملی اجازت، پھر بھی اتریں گی کامن ویلتھ گیمس میں

    پاکستانی کرکٹر کو بیٹی کو ساتھ میں رکھنے کی نہیں ملی اجازت

    پاکستانی کرکٹر کو بیٹی کو ساتھ میں رکھنے کی نہیں ملی اجازت

    Birmingham Commonwealth Games: برمنگھم کامن ویلتھ گیمس کا انعقاد جولائی-اگست میں ہونا ہے۔ اس میں خاتون کرکٹ کو پہلی بار شامل کیا گیا ہے۔ ہندوستانی ٹیم بھی اس میں اتر رہی ہے۔

    • Share this:
      کراچی: پاکستان کی خاتون کرکٹ ٹیم کی کپتان بسمہ معروف (Bismah Maroof) نے آرگنائزروں کے ذریعہ اپنی نوزائیدہ بیٹی کو کھیل گاوں میں داخلہ کے لئے منظوری کا خط دینے سے انکار کرنے کے باوجود برمنگھم میں کامن ویلتھ گیمس میں حصہ لینے کا فیصلہ کیا ہے۔ پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے ایک ذرائع نے تصدیق کی کہ فیصلہ کیا گیا کہ بسمہ معروف گیمس میں کھیلیں گی اور ان کی بچی اور بچی کی دیکھ بھال کرنے والی اسسٹنٹ کھیل گاوں کے باہر ہوٹل یا باہر کسی رہائش گاہ میں ٹھہریں گی۔

      انہوں نے کہا، ’بچی اور بچی کی دیکھ بھال کرنے والی اسسٹنٹ کامن ویلتھ گیمس کے لئے برمنگھم جائیں گی، لیکن کھیل گاوں میں ان کے ساتھ نہیں ٹھہر پائیں گی، کیونکہ آرگنائزروں نے اجازت نہیں دی۔ کیونکہ ان کی والد-والدہ سے متعلق کوئی پالیسی نہیں ہے‘۔ پی سی بی نے بسمہ معروف کو والدین سے متعلق تعاون کی پالیسی کے تحت سفر اور رہائش کے اخراجات شیئر کرنے پر رضا مندی ظاہر کردی ہے۔ گزشتہ دنوں وہ عالمی کپ کے دوران بھی اپنی بیٹی کے ساتھ دیکھی گئی تھیں۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      امباتی رائیڈو نے اچانک کیوں کیا ریٹائر منٹ والا ٹوئٹ؟ چنئی سپرکنگس کے افسر نے کھولا راز

      پھر ملی ہے ٹیم کی کمان

      بورڈ نے گزشتہ دنوں بسمہ معروف کو دوبارہ ٹیم کا کپتان بنایا ہے۔ وہ 2022 سے لے کر 2023 تک خاتون ٹیم کی کپتان بنی رہیں گی۔ حالانکہ ان کی قیادت میں نیوزی لینڈ میں کھیلے گئے خاتون ٹی20 عالمی کپ میں ٹیم کی کارکردگی اچھی نہیں رہی تھی۔ ٹیم 7 میں سے صرف ایک ہی میچ جیت سکی تھی۔ بسمہ معروف نے اس کے بعد کہا تھا کہ کسی بھی کرکٹر کے لئے ملک کی کپتانی کرنا اعزاز کی بات ہے۔ میرے لئے اس کردار کو جاری رکھنا بدقسمتی کی بات ہے۔

      خاتون کرکٹ کو پہلی بار کامن ویلتھ گیمس میں شامل کیا گیا

      خاتون کرکٹ کو پہلی بار کامن ویلتھ گیمس میں شامل کیا گیا ہے۔ اس میں ٹی20 کے مقابلے کھیلے جائیں گے۔ کل 8 ٹیمیں اس میں اتر رہی ہیں۔ گروپ اے میں آسٹریلیا، باربا ڈوس، ہندوستان اور پاکستان ہیں۔ یعنی ہندوستان اور پاکستان کے درمیان دلچسپ مقابلہ دیکھنے کو ملے گا۔ وہیں گروپ بی میں انگلینڈ، نیوزی لینڈ، سری لنکا اور جنوبی افریقہ ہیں۔ دونوں گروپ کی ٹاپ-2 ٹیمیں سیمی فائنل میں جائیں گی۔ مقابلے 29 جولائی سے 7 اگست تک چلیں گے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: