ہوم » نیوز » اسپورٹس

دنیائے کرکٹ میں مچا ہنگامہ، مسلم کرکٹر پر جشن میں ڈال دی گئی شراب

باب ولیس ٹرافی 2020 (bob willis trophy 2020) کے فائنل میں ایسیکس نے سمرسیٹ کو شکست دے کر خطاب جیتا۔ ٹیم نے شمیپین اور بیئر سے خطاب جیتنے کا جشن منایا۔ جشن کے اس ماحول میں ٹیم کے سینئر کھلاڑی ول بٹلمین نے اپنی ٹیم کے ساتھی مسلم کرکٹر فیروز کے سر پر بھی بیئر ڈال دی، جس کے بعد جم کر ہنگامہ مچ گیا۔

  • Share this:
دنیائے کرکٹ میں مچا ہنگامہ، مسلم کرکٹر پر جشن میں ڈال دی گئی شراب
دنیائے کرکٹ میں مچا ہنگامہ، مسلم کرکٹر پر جشن میں ڈالی شراب

دنیائے کرکٹ میں جم کر ہنگامہ مچ گیا ہے۔ وجہ جیت کے جشن میں مسلم کرکٹر پر ڈالی گئی شراب (بیئر) ہے۔ دراصل باب ولیس ٹرافی 2020 (bob willis trophy 2020) کے فائنل میں ایسیکس نے سمرسیٹ کو شکست دے کر خطاب جیتا۔ ٹیم نے شمیپین اور بیئر سے خطاب جیتنے کا جشن منایا۔ جشن کے اس ماحول میں ٹیم کے سینئر کھلاڑی ول بٹلمین نے اپنی ٹیم کے ساتھی مسلم کرکٹر فیروز کے سر پر بھی بیئر ڈال دی، جس کے بعد جم کر ہنگامہ مچ گیا۔ اس سے ایسٹ لندن میں برٹش ایشیائی کمیونٹی بھی کافی ناراض ہے۔ اس کے بعد کلب پر معافی مانگنے کا بھی دباو بڑھتا جارہا ہے۔


وہیں ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق، ایسیکس نے کہا کہ ایسیکس پورے کاونٹی اور آس پاس کے علاقوں میں متعدد طبقات کے اندر اپنے کام پر فخر کرتا ہے۔ ایسیکس نے کہا کہ ان کی ٹیم مختلف پس منظر اور مختلف مذہب کے کھلاڑیوں کے ساتھ  متعدد طبقے کی ٹیم ہے، جہاں ان کے دلوں میں کرکٹ ہے۔ ان کے مطابق کلب نے کافی محنت کی ہے، یہ ہرکسی کو اس میں لانا جاری رکھے گا۔ تنوع پر تعلیم یافتہ بنائے گا، مگر آگے کا کام کھیل اور سماج دونوں میں معمول کے مطابق کیا جانا چاہئے۔ تاکہ لوگوں کے علم کو وسیع بنایا جاسکے۔ ثقافتی اختلافات کے بارے میں زیادہ بیدار کیا جاسکے۔


2019 عالمی کپ کی دی گئی مثال


نیشنل کرکٹ لیگ کے شریک بانی ساجد پٹیل نے بھی اس حادثہ کو لےکر اپنی ناراضگی ظاہر کی۔ انہوں نے اس حادثہ کو جرم بتاتے ہوئے انگلینڈ ٹیم کی مثال دی، جنہوں نے جشن میں بھی عادل رشید اور معین علی کا خیال رکھا۔ انگلینڈ کی ٹیم جب شیمپین اڑا کر عالمی کپ 2019 جیتنے کا جشن منا رہی تھی، تب دونوں کو کنارے جانے کا اشارہ کیا گیا تھا۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Sep 29, 2020 08:19 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading