உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    IND-W vs PAK-W: ہندوستانی خواتین کرکٹ ٹیم نے پاکستان کو دھو ڈالا، مندھانا نے مچایا کہرام

    Commonwealth Games 2022: ہندوستانی خواتین کرکٹ ٹیم نے کامن ویلتھ گیمس میں شاندار واپسی کی ہے۔ ٹیم نے ایک مقابلے میں (IND-W vs PAK-W) سخت حریف پاکستان کو 8 وکٹ سے روند دیا۔

    Commonwealth Games 2022: ہندوستانی خواتین کرکٹ ٹیم نے کامن ویلتھ گیمس میں شاندار واپسی کی ہے۔ ٹیم نے ایک مقابلے میں (IND-W vs PAK-W) سخت حریف پاکستان کو 8 وکٹ سے روند دیا۔

    Commonwealth Games 2022: ہندوستانی خواتین کرکٹ ٹیم نے کامن ویلتھ گیمس میں شاندار واپسی کی ہے۔ ٹیم نے ایک مقابلے میں (IND-W vs PAK-W) سخت حریف پاکستان کو 8 وکٹ سے روند دیا۔

    • Share this:
      ایجبسٹن: ہندوستانی خواتین کرکٹ ٹیم نے کامن ویلتھ گیمس (Commonwealth Games 2022) میں شاندار واپسی کی ہے۔ ٹیم نے دوسرے مقابلے میں (IND-W vs PAK-W) سخت حریف پاکستان کو 8 وکٹ سے شکست دی۔ سلامی بلے باز اسمرتی مندھانا 42 گیندوں پر 63 رن بناکر ناٹ آوٹ رہیں۔ 8 چوکے اور 3 چھکے لگائے۔ ہندوستانی ٹیم کو پہلے میچ میں آسٹریلیا سے 3 وکٹ سے شکست ملی تھی۔ بارش کے سبب میچ کو 18-18 اوور کر دیا گیا تھا۔ پاکستان کی ٹیم پہلے کھیلتے ہوئے صرف 99 رن بناکر آوٹ ہوگئی۔

      جواب میں اسمرتی مندھانا اور شیفالی ورما کی قیادت میں ہندوستان ٹیم نے ہدف کو 11.4 اوور میں 2 وکٹ پر حاصل کرلیا۔ یعنی ابھی 38 گیندوں کا کھیل باقی تھا۔ ٹیم اپنے آخری لیگ میچ میں اب تک تین اگست کو باربا ڈوس سے مدمقابل ہوگی۔

      ہدف کا پیچھا کرنے اتری ہندوستانی خواتین ٹیم نے بے حد ہی جارحانہ شروعات کی۔ 5 اوور کے پاور پلے کے بعد اسکور بنا وکٹ کے 52 رن تھا۔ مندھانا 23 گیندوں پر 39 اور شیفالی ورما 7 گیندوں پر 12 رن بناکر کھیل رہی تھیں۔ پہلے 5 اوور میں ہندوستانی بلے بازوں نے 10 باونڈری لگائی۔ اس میں 7 چوکا اور تین چھکا شامل تھا۔ اسمرتی مندھانا نے 31 گیندوں پر نصف سنچری مکمل کی۔ اس دوران انہوں نے 7 چوکے اور تین چھکے لگائے۔ 26 سال کی اس بلے باز کا یہ ٹی20 انٹرنیشنل کیریئر کی 15ویں نصف سنچری ہے۔

      شیفالی کے ساتھ 61 رن جوڑے

      اسمرتی مندھانا اور شیفالی ورما نے پہلے وکٹ کے لئے 5.5 اوور میں 61 رن جوڑے۔ شیفالی ورما 9 گیندوں پر 16 رن بناکر لیگ اسپنر طوبیٰ حسن کا شکار ہوئیں، لیکن تب تک ہندوستانی ٹیم میچ میں کافی آگے ہوچکی تھی۔ نمبر-3 پر ایک میگھنا اتریں۔ وہ 16 گیندوں پر 14 رن بناکر آوٹ ہوئیں۔ انہوں نے دوسرے وکٹ کے لئے اسمرتی مندھانا کے ساتھ 33 رن جوڑے۔ وہ جب آوٹ ہوئیں، تب ٹیم کو جیت کے لئے صرف 6 رن اور بنانے تھے۔ جیمیما روڈرگز 2 رن بناکر ناٹ آوٹ رہیں۔

      اس سے قبل پاکستان کی کپتان بسمہ معروف نے ٹاس جیت کر بلے بازی کرنے کا فیصلہ کیا۔ ایک وقت ٹیم کا اسکور ایک وکٹ پر 50 رن تھا، لیکن ٹیم نے آخری 9 وکٹ صرف 49 رن پر گنوا دیئے۔ سلامی بلے باز منیبہ علی نے سب سے زیادہ 32 رن بنائے۔ وہیں عالیہ ریاض نے 18 رنوں کا تعاون دیا۔ اسنیہ رانا نے 15 رن دے کر 2 وکٹ حاصل کئے۔ بائیں ہاتھ کی اسپنر رادھا یادو نے بھی 2 وکٹ حاصل کئے۔ اس کے علاوہ شیفالی ورما، رینوکا سنگھ اور میگھنا سنگھ کے نام بھی ایک ایک وکٹ رہا۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: