ہوم » نیوز » اسپورٹس

!ٹیم انڈیا کا یہ میچ تھا فکس، ان کھلاڑیوں نے کی اسپاٹ فکسنگ

الجزیرہ چینل نے دعویٰ کیا ہے کہ 15 میچوں میں 26 بار اسپاٹ فکسنگ ہوئی جس میں انگلینڈ، آسٹریلیا اور پاکستان کے کرکٹر شامل تھے

  • Share this:
!ٹیم انڈیا کا یہ میچ تھا فکس، ان کھلاڑیوں نے کی اسپاٹ فکسنگ
فائل تصویر

سال 2014 میں انگلینڈ دورے پر ٹیم انڈیا نے لارڈس کے میدان پر میزبان ٹیم کو شکست دے کر تاریخ رقم کر دی تھی۔ ہندوستانی ٹیم کو اس تاریخی میدان پر 28 سال بعد جیت حاصل ہوئی تھی۔ تاہم اب اس تاریخی جیت پر ایک داغ لگتا نظر آرہا ہے۔ الجزیرہ چینل کا دعویٰ ہے کہ یہ میچ فکس تھا۔

الجزیرہ نے اتوار کے روز ڈاکیومینٹری میں دعویٰ کیا ہے کہ اس میچ میں اسپاٹ فکسنگ ہوئی اور اس میں انگلینڈ کے کھلاڑی شامل تھے۔ تاہم انگلینڈ کرکٹ بورڈ نے اس بات سے انکار کیا ہے۔

صرف انگلینڈ ہی نہیں آسٹریلیا کے کھلاڑیوں پر بھی اسپاٹ فکسنگ کے الزامات لگے ہیں۔ آئی سی سی کے رڈار پر چل رہے مبینہ میچ فکسر انل منور نے دعویٰ کیا ہے کہ 2011 سے 2012 کے درمیان چھ ٹسٹ، چھ ون ڈے اور تین ورلڈ ٹی 20 میچوں میں فکسنگ ہوئی۔ کرکٹ آسٹریلیا نے بھی اسپاٹ فکسنگ کو پوری طرح غلط بتایا ہے۔ جلد ہی آسٹریلیائی کرکٹ بورڈ اس پر بیان جاری کر سکتا ہے۔

اس ڈاکیومینٹری کا نام ’ کرکٹ کے میچ فکسرس: دی منور فائلس‘ ہے۔ بتایا گیا ہے کہ 2011 میں ہندوستان -انگلینڈ کے بیچ کھیلا گیا لارڈس ٹسٹ، رواں سال جنوبی افریقہ-آسٹریلیا کا کیپ ٹاون ٹیسٹ بھی شک کےدائرے میں ہے۔ 2011 ورلڈ کپ کے پانچ میچ اور 2012 میں سری لنکا میں ہوئے ورلڈ ٹی 20 میں تین میچ میں بھی فکسنگ کا دعویٰ کیا گیا ہے۔ ڈاکیومنٹری میں 2012 میں یو اے ای میں انگلینڈ۔ پاکستان کے بیچ ہوئے تین ٹسٹ میچوں میں ہوئی کامیاب اسپاٹ فکسنگ کا بھی ذکر کیا گیا ہے۔

First published: Oct 22, 2018 03:27 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading