ہوم » نیوز » اسپورٹس

اس کھلاڑی نے ہندوستان کیلئے کیا تھا ڈیبیو ، پھر تھام لیا پاکستان کا دامن اور پھر ...۔

عامر الہی کو گیند باز کے طور پر شامل کیا گیا تھا ، لیکن وہ ایک بھی گیند نہیں کرسکے تھے ۔ بلے بازی میں انہیں موقع ملا تھا ۔

  • Share this:
اس کھلاڑی نے ہندوستان کیلئے کیا تھا ڈیبیو ، پھر تھام لیا پاکستان کا دامن اور پھر ...۔
اس کھلاڑی نے ہندوستان کیلئے کیا تھا ڈیبیو ، پھر تھام لیا پاکستان کا دامن اور پھر ...۔

ہندوستان اور پاکستان کے رشتوں میں فی الحال کافی کشیدگی ہے ۔ جموں و کشمیر سے آرٹیکل 370 ختم کئے جانے کے بعد سے دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی مزید بڑھ گئی ہے ۔ گزشتہ کئی سالوں سے ہندوستان اور پاکستان میں تلخی ہے ، جس کی وجہ سے دونوں ممالک کے درمیان کئی سالوں سے کرکٹ میچ نہیں ہورہے ہیں ۔ صرف آئی سی سی اور ایشین کرکٹ کونسل کے میچوں میں ہی دونوں ٹیمیں آمنے سامنے ہوتی ہیں ، لیکن ایک وقت ایسا بھی تھا جب کچھ کھلاڑیوں نے دونوں ممالک کیلئے بین الاقوامی کرکٹ کھیلی تھی ، ان میں سے ایک نام عامر الہی کا تھا ۔ ان کی پیدائش آج ہی کے دن ہوئی تھی ، یعنی یکم ستمبر 1908 کو لاہور میں ہوئی ۔ 39 سال بعد 1947 میں آزادی کے کچھ وقت بعد انہوں نے ہندوستان کی طرف سے ٹیسٹ میچ کھیلا تھا ۔ آسٹریلیا کے خلاف وہ ہندوستان کی جانب سے کھیلے تھے ۔


الہی کو گیند باز کے طور پر شامل کیا گیا تھا ، لیکن وہ ایک بھی گیند نہیں کرسکے تھے ۔ بلے بازی میں انہیں موقع ملا تھا ۔ ہندوستان کی طرف سے پہلی اننگز میں وہ 10 ویں نمبر پر بلے بازی کیلئے آئے تھے اور چار رن بنائے تھے ۔ اس کے بعد دوسری اننگز میں وہ اوپن کرنے کیلئے اترے تھے ، جس میں انہوں نے 13 رن بنائے تھے ۔ اس میچ میں ہندوستان نے پہلی اننگز میں 188 رن بنائے تھے ، جس کے جواب میں میزبان آسٹریلیا 107 رن پر آوٹ ہوگئی تھی ۔ اس ٹیم میں ڈان بریڈمین بھی کھیل رہے تھے ۔ حالانکہ دوسری اننگز میں ہندوستان نے صرف 61 رن پر سات وکٹ گنوا دئے تھے ۔ یہ میچ ڈرا ہوا تھا ۔


amir elahi, india pakistan, this day in cricket, this day that year cricket, amir elahi india pakistan, आमिर इलाही, इंडिया पाकिस्‍तान, आमिर इलाही क्रिकेट


عامر الہی کیلئے یہ ہندوستانی ٹیم میں آخری میچ تھا ۔ اس کے بعد انہوں نے مزید پانچ ٹیسٹ میچ کھیلے ، لیکن یہ سبھی میچ انہوں نے پاکستان کی طرف سے ہندوستان کے خلاف کھیلے ۔ ان میں سے دو میچ ہندوستان نے جیتا اور ایک پاکستان کے نام رہا جبکہ دو میچ ڈرا رہے تھے ۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ ان کا آخری بین الاقوامی میچ ہندوستان کے خلاف ہی تھا ۔ 1952 میں چنئی ٹیسٹ میں انہوں نے اپنا سب سے زیادہ اسکور 47 رن بنایا تھا ۔ انہوں نے اپنے کیرئیر میں چھ ٹیسٹ میچ میں کل 82 رن بنائے اور سات وکٹ لئے ۔
First published: Sep 01, 2019 09:08 AM IST